سارک ممالک میں باہمی تجارت کے زریعے غربت ختم کی جاسکتی ہے وزیر تجارت خرم دستگیر

سارک ممالک میں باہمی تجارت کے زریعے غربت ختم کی جاسکتی ہے وزیر تجارت خرم ...

  



                       اسلام آباد(کامرس ڈیسک)وفاقی وزیر تجارت خرم دستگیر خان نے کہا ہے کہ اس وقت تمام سارک ممالک میں جمہوریت ہے اور ہم سب کو مل کر غلط فہمیوں کا خاتمہ کرنا چائیے تاکہ شکوک و شبہات ختم ہوں اور باہمی تجارت کے زریعے خطہ سے غربت ختم کی جا سکے۔ انھوں نے یہ بات مقامی ہوٹل میں سارک چیمبر آف کامرس کی جانب سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ ہمارے وسائل بے تحاشہ اور مسائل مشترک ہیں جنھیں مل کر ہی حل کرنا ہو گا۔ہم میں سے ہر شخص کو سارک کے سفیر کا کردار ادا کرنا ہو گا۔اس موقع پر اپنے خطاب میں افتخار علی ملک نے کہا کہ سارک ممالک کے مابین توانائی کے حالیہ معاہدے سے ہماری امیدیں بڑھ گئی ہیں اور اس سے باہمی ربط بڑھے گا۔انھوں نے امید ظاہر کی کہ حکومت پاکستان سارک موٹر وہیکل اور ریلوے کے معاہدوں کی جلد منظوری دے دیگی جو خطہ کو مربوط بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ایف پی سی سی آئی کے سابق صدر زبیر احمد ملک نے کہا کہ علاقائی تعاون اور تجارت کے بغیر عوام کی فلاح ناممکن ہے اسلئے پڑوسی ممالک سے تعلقات ضروری ہیں۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان اعتماد میں اضافہ سے دونوں ملکوں کے عوام کے علاوہ پورے جنوبی ایشیا کی ترقی ہو گی ۔صلاحیت ہونے کے باوجود سارک میں پچاس فیصد لوگ غربت کا شکار ہیں جنھیں غربت سے نکالا جا سکتا ہے۔ اجلاس میں سارک ممالک کے سفیروں اور اعلیٰ عہدیداروں نے بھی شرکت کی۔ بھارت کے سفیر نے حالیہ سارک سربراہی کانفرنس کے دوران ملٹی ماڈل روڈایگریمنٹ پر عدم اتفاق پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تمام حتمی معاہدوں پر عمل درامد کرنے کی جتنی ضرورت آج ہے پہلے کبھی نہ تھی۔

مزید : کامرس


loading...