ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن کاریکارڈ میں ردو بدل کے الزام میں درخواستوں پر کاروائی کا آغاز

ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن کاریکارڈ میں ردو بدل کے الزام میں درخواستوں پر ...

لاہور(اپنے نمائندے سے)محکمہ اینٹی کرپشن لاہور ریجن کے ڈپٹی ڈائریکٹرنے اختیارات کا ناجائز استعمال اور ریکارڈ میں ردو بدل کے الزام پر درخواست گزاروں کی جانب سے موصول ہونے والی کمپلینٹ پر کاروائی کا آغاز کر دیا پولیس،ریونیو اور کو آپریٹو کے ملازمین کی طلبی،دونوں فریقین کی جانب سے بیانات ریکارڈ کئے گئے مزید سماعت کے لیے17-12-14تک سماعت موخر کر دی گئی روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق محکمہ اینٹی کرپشن لاہور ریجن کے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈاکٹر نور محمد اعوان کے دفتر میں محکمہ پولیس،ریونیو اور کو آپریٹو کے ملازمین کے خلاف دائر درخواستوں کی سماعت کی گئی جن میں محکمہ پولیس کے خلاف درخواست گزار چوہدری محمد جاوید نے الزام عائد کیا جس کی انکوائری نمبر35L/14ہے برخلاف مظہر اقبال ایس ایچ او اکبری منڈی ،درخواست گزار غلام مصطفیٰ نے برخلاف رانا ناصر عباس ایس ایچ او کے خلاف اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں درخواست دی جس کا انکوائری نمبرE340/14ہے جبکہ مقامی ایس ایچ او تھانہ گلشن اقبال کی جانب سے مقدمہ نمبر402/13برخلاف مختار احمد اے ایس آئی پیش کیا گیا۔

۔ محکمہ ریونیو کے پٹواری حلقہ قلعہ گجر سنگھ افتخار احمد کے خلاف حاجی محمد احمد نے رشوت وصولی کا الزام عائد کیا جس کی انکوائری نمبرE683/14ہے اور رانا محسن عزیز ایڈوکیٹ کی درخواست پر موضع کوٹ محبو کے پٹواری جمشید علی کے خلاف انکوائری نمبر50/17کی بھی سماعت کی گئی جس میں رشوت وصولی الزام عائد کیا گیا ہے۔محمد نوید نامی شخص کی درخواست پر برخلاف چوہدری محمد اسلم کنٹرولرCMAکو آپریٹو سوسائٹی سے ریکارڈ بھی طلب کیا گیا جس کی انکوائری625/12ہے اس کے علاوہ زرق منٹو نامی صحافی کی درخواست پر سرکارہ ہسپتال میں تعینات ناہید نامی خاتون وغیرہ سے بھی بیانات لیے گئے مجموعی طور پر7انکوائریوں کی سماعت ڈپٹی ڈائریکٹر انوسٹی گیشن ڈاکٹر نور محمد اعوان کے آفس میں کی گئی جن میں بعض فریقین کی پیشی پر بیانات ریکارڈ کرنے کے بعد17/12/14کی تاریخ تک کیس کی سماعت موخر کی گئی جبکہ غیر حاضر ہونے والے سرکاری ملازمین درخواست گزاروں کی غیر حاضری تحریر کی گئی اس ضمن میں ڈپٹی ڈائریکٹڑ لاہور ریجن کا کہنا تھا کہ روزانہ کی بنیاد پر کیسسز کی سماعت کی جاتی ہے روزانہ کی بنیاد پر اب کارکردگی چیک ہوتی ہے اسطرح کے اقدامات سے عوام الناس کو بہترین نتائج کے ساتھ ساتھ ریلیف مل رہا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...