ملک میں کمزور کیلئے قانون ہیں ،طاقتور کیخلاف کاروائی ہوتی نظر نہیں آتی ،گورنر پنجاب

ملک میں کمزور کیلئے قانون ہیں ،طاقتور کیخلاف کاروائی ہوتی نظر نہیں آتی ...

  



                 لاہور (آئی این پی ) گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ ملک کی ترقی ، میرٹ کی بالادستی اور عوامی خوشحالی اُسی صورت ممکن ہے اگر کرپشن کے خلاف اجتماعی طور پر آوازاٹھاتے ہوئے اسے ہر سطح پر ناقابل برداشت قراردیا جائے، یہ ہمارے لیے لمحہ فکریہ ہے کہ ملک میں کمزور کے لیے تو قانون ہے لیکن طاقتور کے خلاف کاروائی ہوتی نظر نہیں آتی ۔ وہ پیر کو یہاں ہفتہ انسداد بدعنوانی کی تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔گورنر پنجاب نے کہا کہ دنیا میں زندہ اور تہذیب یافتہ قومیں وہی ہیں جہاں بڑی سے بڑی شخصیت کو بھی کرپشن میں ملوث ہونے پر نہ صرف قانون میں حرکت آتا ہے بلکہ اس کے خلاف فوری کاروائی عمل میں لائی جاتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کا خاتمہ اس صورت ممکن ہے جب ہم اداروں کو مستحکم و مضبوط کریں گے،اگر ہمارے ادارے حقیقی معنوں میں مضبوط ہوں گے تو نہ صرف طاقت ور لوگ قانون کی گرفت میں آئیں گے بلکہ حقیقی جمہوریت بھی پھلے پھولے گی ۔انہو ںنے کہا کہ کرپشن پوری دنیا کامسئلہ ہے ،دنیا میں کوئی جگہ ایسی نہیںجہاں کسی نہ کسی شکل میں کرپشن موجود نہیں لیکن بدقسمتی سے جنوبی ایشیا میں یہ اپنی بدترین شکل میں موجود ہے ۔ انہو ںنے کہا کہ ہمارا کوئی شعبہ زندگی ایسانہیں جسے کرپشن کی عفریت نے اپنی لپیٹ میں نہ لیا ہو ۔گورنرپنجاب نے کہا کہ اس تقریب میں بچو ں نے کرپشن کے خلاف جو پُرمغزتقاریر کیں اور کرپشن سے پیدا ہونے والے معاملات اور حالات کو جس طرح بے نقاب کیا وہ قابل قدر و ستائش ہیں اور ہماری یہ خوش قسمتی ہے کہ یہی وہ باصلاحیت نوجوان ہیں جن کے ہاتھوں پاکستان کا محفوظ مستقبل ہے ۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ یہ بات خوش آئند ہے کہ نیب کے ادارے کا اس ضمن میںکردار لائق تحسین ہے ، نیب نے معاشرے میں کرپشن کو ایک سماجی برائی قرار دیا ہے اور عوام کو اس کے بارے میں آگاہی دینے کے لیے مختلف پروگرام تشکیل دیے ہیں۔

 گورنر پنجاب

مزید : صفحہ آخر