وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کیلئے دائر تینوں درخواستیں مسترد

وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کیلئے دائر تینوں درخواستیں مسترد
وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کیلئے دائر تینوں درخواستیں مسترد

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ آف پاکستان نے وزیراعظم کی نااہلی سے متعلق متفرق درخواستیں ناقابل سماعت قراردیتے ہوئے خارج کردیں اور کہاہے کہ درخواست گزار وزیراعظم کی نااہلی پر قائل نہیں کرسکے ۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے سات رکنی بینچ نے وزیراعظم کی نااہلی کے لیے ق لیگ اورتحریک انصاف کی تین متفرق درخواستوں کی سماعت کی ۔ عدالت نے قراردیاہے کہ فوج کے ترجمان نے اپنے ٹوئیٹ میں یہ نہیں بتایاکہ وزیراعظم نے غلط بیانی سے کام لیا۔

اس سے قبل سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ دورکنی بینچ نے چھ سوالات بھیجے تھے جن میں سے پانچ نمبر سوال اہم ہے جس کے مطابق کیاپارلیمنٹ کے معاملات میں عدالت مداخلت کرسکتی ہے ؟ جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیاکہ کیادرخواست گزار نے تقریر کی کاپی حاصل کی جس پر تحریک انصاف لائرز ونگ کی طرف سے گوہرنواز سندھونے ایوان میں وزیراعظم کی تقریر کمرہ عدالت میں پڑھ کر سنائی ۔ بینچ کے استفسار پر گوہرنواز سندھو نے بتایاکہ ہمارا یقین ہے وزیراعظم نے جھوٹ بولاجس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ یہ آپ کا یقین ہے یا وزیراعظم نے ایوان میں غلط بیانی بھی کی ؟

عدالت نے اپنے فیصلے میں قراردیاہے کہ وزیرداخلہ نے بھی تائید کی ہے کہ وزیراعظم نے کوئی غلط بیانی نہیں کی اور نہ ہی پاک فوج کے ترجمان نے وزیراعظم کی غلط بیانی سے متعلق کوئی ٹوئیٹ کی لہٰذا درخواستیں ناقابل سماعت ہیں اور مستردکی جاتی ہیں ۔

مزید : قومی


loading...