مالک کی ملازمہ سے 6 ماہ تک مسلسل زیادتی،لڑکی حاملہ

مالک کی ملازمہ سے 6 ماہ تک مسلسل زیادتی،لڑکی حاملہ
مالک کی ملازمہ سے 6 ماہ تک مسلسل زیادتی،لڑکی حاملہ

  



سرگودھا (ویب ڈیسک) پتوکی شہر سے مزدوری کیلئے آئی ہوئی 15 سالہ ہما سے ملزمان گن پوائنٹ پر عرصہ چھ ماہ سے زیادتی کرتے رہے اور لڑکی کو حاملہ کر نے کے بعد فرار ہو گئے جبکہ درخواست دینے پر پولیس ملزمان سے مل گئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق فاروق کالونی کی رہائشی سمعیہ بی بی اس کے خاوند بلال اور متاثرہ لڑکی ہما نے نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ 15 سالہ ہما پتوکی شہر سے ہمارے گھر عرصہ تین سال سے کام کاج کرنے کیلئے آئی ہوئی تھی۔ ملزم مطلوب ہمارا محلے دار تھا اور ہما کو کام کروانے کے بہانے اپنے گھر لے جاتا تھا اور زبردستی گن پوائنٹ پر اپنے ساتھیوں سے مل کر زیادتی کا نشانہ بناتا رہا جس سے لڑکی حاملہ ہو گئی ملزمان لڑکی کو ڈراتے دھمکاتے رہے اگر کسی کو بتایا تو جان سے مار دیں گے۔ سمعیہ بی بی کا کہنا ہے کہ وہ ایک دن سبزی لینے کیلئے دکان پر گئی تو واپسی پر اچانک کمرے میں داخل ہوئی تو ملزم مطلوب جو کہ لڑکی کو کام کے بہانے سے لینے کیلئے آیا ہوا تھا اور مجھے گھرمیں نہ پا کر لڑکی سے زبردستی کر رہا تھا جبکہ لڑکی زار و قطار روتی رہی اور چیخ و پکار کر رہی تھی اور ملزم مجھے دیکھتے ہی بھاگ نکلا۔ سمعیہ بی بی نے کہا کہ ہما نے بتایا کہ ملزم مطلوب اور اس کے ساتھی پہلے بھی کام کے بہانہ لے جا کر مجھ سے زیادتی کرتے رہے ہیں۔ خوف اور جان سے ماردینے کی دھمکی کی وجہ سے نہ بتا سکی۔ سمعیہ بی بی نے تھانہ ساجد شہید میں ملزمان کے خلاف درخواست گزاری جس پر تھانہ ساجد شہید کا ASI کارروائی کرنے سے انکاری ہے۔سمعیہ بی بی کا کہنا ہے کہ ہم نے ملزم مطلوب کو تھانہ میں پکڑایا تھا جبکہ پولیس نے 30 ہزار روپے لیکر م قامی MPA مسلم لیگ ن عبدالرزاق ڈھلوں کے کہنے پرچھوڑ دیا ہے۔ مقامی پولیس نے آج تک نہ تو ایف آئی آر درج کی ہے اور نہ ہی آج تک متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کروایا ہے متاثرہ لڑکی نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

ملالہ کے خون آلود یونیفارم کی اوسلو میں نمائش ہو گی

مزید : سرگودھا