ٹیکس چوروں کو چودہ سال کی قید بامشقت دینے کی تجویز

ٹیکس چوروں کو چودہ سال کی قید بامشقت دینے کی تجویز
ٹیکس چوروں کو چودہ سال کی قید بامشقت دینے کی تجویز

  



اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی حکومت اس بات کا جائز ہ لے رہی ہے کہ ٹیکس کے نظام کو زیادہ موثر بنانے کیلئے اور ٹیکس چوری کا تدارک کرنے کیلئے ٹیکس چھپانے کی سزا میں خاطر خواہ اضافہ کر دیا جائے اور آئندہ ٹیکس چوری پر صرف چھپائے گئے ٹیکس کے مساوی پنلٹی کی معمولی سزا کی بجائے امریکہ اور دوسرے مغربی ممالک کی طرح چودہ سے بیس سال تک قید بامشقت کی سزا دی جائے۔تفصیلات کے طابق امریکہ میں ٹیکس چوروں کو 17 سال تک کی سزا دینا معمول ہے اور دوسرے یورپی ممالک میں بھی انتہائی سخت سزائے قید دی جا رہی ہے۔ جرمنی میں ٹیکس چور گھرسے گرفتار کرکے جیل پہنچائے جانے کا منظر ٹی وی چینل پر براہ راست دکھایا جاتا ہے تاکہ باقی ٹیکس چور عبرت پکڑیں۔ وزارت خزانہ پاکستان میں بھی ٹیکس چوری اور کالے دھن کی روک تھام کیلئے موثر اقدامات کرنے کا جائزہ لے رہی ہے اس سلسلے میں انہیں اقوام متحدہ اور انٹرنیشنل ڈونرز ایجنسیوں کی مکمل تائید و تعاون حاصل ہے۔ ذرائع کے مطابق نئے مالی سال کے و فاقی بجٹ میں وزیر خزانہ اقتصادی امور نجکاری و شماریات سینیٹر اسحاق ڈار اس حوالے سے مالیاتی بل میں ٹیکس چو ر کو عبرتناک سزا دینے کی شقیں شامل کرائیں گے۔

تحریک انصاف کے ”عسکری ونگ“ نے دہشت گردی کا ماحول گرم کیا: عابد شیر علی

مزید : اسلام آباد


loading...