دنیا کا خوش قسمت ترین نوجوان، دریا میں ایک ڈبکی نے کروڑ پتی بنادیا

دنیا کا خوش قسمت ترین نوجوان، دریا میں ایک ڈبکی نے کروڑ پتی بنادیا
دنیا کا خوش قسمت ترین نوجوان، دریا میں ایک ڈبکی نے کروڑ پتی بنادیا

  

ویانا (نیوز ڈیسک) یورپی ملک آسٹریا میں دریا کنارے کھڑے لوگ جس نوجوان کو خود کشی کرتا دیکھ کر اس کی قسمت پر افسوس کر رہے تھے ، اسی نوجوان کو کچھ دیر بعد ڈھیروں دولت کے ساتھ دریا سے نکلتے دیکھ کر اس کی قسمت پر رشک کرنے لگے۔

اخبار اوسٹیرش کے مطابق ہفتے کے روز جب لوگوں نے ایک نوجوان کو دریائے ڈینیوب میں چھلانگ لگاتا دیکھا تو خوفزدہ ہوکر شور مچانا شروع کردیا اور کچھ لوگوں نے پولیس کو بھی اطلاع کردی۔ کچھ دیر بعد پولیس موقع پر پہنچ گئی اورادھر نوجوان بھی دریا سے بے شمار نوٹوں کے ساتھ برآمد ہوتانظر آیا۔

مزید جانئے: نوجوان بہن بھائی نے اپنے والدین سے ایسی بات کہہ ڈالی کہ ان کے ہوش اڑادئیے اور پھر۔۔۔ دنیا کا انوکھا ترین خاندان

بظاہر خود کشی کی نیت سے دریا میں کودنے والانوجوان پانی میں سے ایک لاکھ یورو (تقریباً ایک کروڑ 13 لاکھ پاکستانی روپے) کے نوٹ نکال لایا تھا۔ اخبار کے مطابق پولیس نوٹوں کے ساتھ نوجوان کو بھی تفتیش کے لئے تھانے لے گئی۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ نوجوان کو یہ رقم اتفاقاً ملی اور اب وہ اس میں سے کچھ حصہ طلب کر رہا ہے، تا ہم ابھی یہ واضح نہیں کہ رقم اسے ہی ملی یا پولیس کے آنے پر کسی اہلکار کی نظر اس پر پڑی۔

آسٹریا کے قانون کے مطابق اگر کسی شخص کو لاوارث رقم ملتی ہے اور وہ اسے پولیس کے پاس لے آتا ہے تو اسے 5 سے 10 فیصد حصہ مل سکتا ہے۔ اگر ایک سال تک رقم کے اصل مالک کا پتہ نہ چل سکے تو اسے پانے والا یہ تمام رقم بھی حاصل کرسکتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -