طالبعلم کے پاس سے 160 جعلی پاسپورٹ بازیاب، کن ممالک کے تھے اور کس لئے بنائے گئے؟ ایسا انکشاف کہ تفتیشی ادارے بھی چکرا کر رہ گئے

طالبعلم کے پاس سے 160 جعلی پاسپورٹ بازیاب، کن ممالک کے تھے اور کس لئے بنائے ...
طالبعلم کے پاس سے 160 جعلی پاسپورٹ بازیاب، کن ممالک کے تھے اور کس لئے بنائے گئے؟ ایسا انکشاف کہ تفتیشی ادارے بھی چکرا کر رہ گئے

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں بی بی اے سال اول کے ایک طالبعلم کے پاس سے متحدہ عرب امارات، عراق اور سعودی عرب جیسے ممالک کے 160 جعلی پاسپورٹ، جعلی اسناد اور تجربے کے جعلی سرٹیفیکیٹ برآمد ہونے پر بین الاقوامی پیمانے کی جعلسازی اور فراڈ کا بڑا واقعہ سامنے آ گیا ہے۔ تفتیشی ادارے یہ جان کر چکرا گئے ہیں کہ نوعمر طالبعلم بھارتی شہریوں کو غیر قانونی طور پر عرب ممالک میں بھیجنے اور نوکریاں دلوانے کا ایک بہت بڑا نیٹ ورک چلا رہا تھا۔

اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق وکاس کمار کا تعلق ریاست بہار کے شہر گوپال گنج سے ہے اور وہ ایک مقامی پرائیویٹ کالج میں بی بی اے سال اول کا طالب علم ہے۔ ایس ایس پی متھرا راکیش سنگھ کا کہنا ہے کہ طالبعلم کرائے کے کمرے میں رہتا تھا، جس کے مالک نے شکوک و شبہات کی بناءپر پولیس سے رابطہ کیا تھا۔ اگرچہ کالج کی طرف سے اسے ہاسٹل دیا گیا تھا مگر بعد ازاں اس کی مشکوک سرگرمیوں کی وجہ سے اس کو ہاسٹل سے نکال دیا گیا۔

مزید جانئے: انٹرنیٹ پر ایک شرمناک حرکت آدمی کو بہت مہنگی پڑی، نوکری گئی، بیوی گئی اور ذہنی توازن بھی گیا، عبرت ناک داستان

پولیس کو اطلاع کرنے والے شخص کا کہنا ہے کہ وکاس کمار کی حرکتیں بہت مشکوک تھیں۔ وہ ہر دوسرے دن اپنے کمرے کا تالہ تبدیل کرتا تھا، کسی سے بات چیت نہیں کرتا تھا اور عموماً سارا وقت کمرے میں ہی گھسا رہتا تھا۔ پولیس نے اس کے کمرے پر چھاپہ مارا تو 160 جعلی پاسپورٹ برآمد ہوئے جن میں بھارتی اور عرب ممالک کے پاسپورٹ شامل ہیں جبکہ کچھ ملازمت کے سرٹیفکیٹ اور ویزا درخواستیں بھی برآمد ہوئیں۔ متعدد پاسپورٹ لوگوں کو غیر قانونی طور پر دبئی اور عراق بھیجنے کے لئے بنائے گئے تھے۔

پولیس کے مطابق وکاس کمار عرب ممالک میں ملازمتوں پر نظر رکھتا تھا اور پھر بھارتی شہریوں کے جعلی پاسپورٹ اور جعلی تجربے کے سرٹیفکیٹ بنا کر نہ صرف کمپنیوں سے رقم کماتا تھا بلکہ ملازمت کے متلاشی لوگوں کو بھی لوٹتا تھا۔ پولیس شاطر ملزم کے خلاف مزید تحقیقات کررہی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -