حکومت بتائے کشمیر سے متعلق کیابات ہوئی‘ عمر عبداللہ کا سوال

حکومت بتائے کشمیر سے متعلق کیابات ہوئی‘ عمر عبداللہ کا سوال

  

سری نگر (کے پی آئی) مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلی عمر عبداللہ نے بی جے پی سے سوالیہ انداز میں پوچھا ہے کہ وہ اس بات کی وضاحت کرے کہ بینکاک میں کیا بھارت کو کشمیر پر بات چیت کیلئے مجبور کیا گیا؟۔ انہوں نے پوچھا کہ اگر پاکستان کے ساتھ بھارت نے دہشت گردی کا مسئلہ اٹھایا تو پاکستان نے کشمیر کا مسئلہ اٹھایا؟۔ سابق ریاستی وزیرا علی عمر عبداللہ نے بی جے پی کو اس بات کی وضاحت کرنے پر زور دیا کہ اگر بینکاک میں دونوں ملکوں کے سلامتی مشیروں کے درمیان بات چیت میں اگر پاکستان کو دہشت گردی پر بات کیلئے مجبور کیاگیا تو کیا بھارت کو کشمیر پر بات چیت کیلئے مجبور کیاگیا ۔

حالانکہ اسکا ذکر دونوں ملکوں کے وزرااعظم کے درمیان اوفا ملاقات میں نہیں ہوا تھا۔ ٹویٹ کرتے ہوئے عمر عبداللہ بی جے پی کے اس بیان پر ردعمل ظاہر کررہے تھے جس میں ا نہوں نے کہا تھااوفا بات چیت پر عمل ہوا،پاکستان کو دہشت گردی پر بات کیلئے مجبور کیاگیا جس سے اب تک انکاری تھے۔عمر نے بی جے پی سے کہا کہ وہ اس بات کی وضاحت کرے کہ بنکاک میں مذاکرات کے دوران جموں وکشمیر سے متعلق کیابات ہوئی۔ان کا کہناتھاشاید اب مسٹر نیلن کوہلی کشمیر پر ہوئی بات چیت کے حوالے سے پارٹی کی پوزیشن واضح کرنے کی زحمت گوارا کریں گے۔

مزید :

عالمی منظر -