بھارت اور پاکستان کے قومی سلامتی مشیروں کے درمیان بات چیت اچھی شروعا ت ہے ‘ مفتی محمد سعید

بھارت اور پاکستان کے قومی سلامتی مشیروں کے درمیان بات چیت اچھی شروعا ت ہے ‘ ...

سری نگر (کے پی آئی) مقبوضہ کشمیر کے وزیر اعلی مفتی محمد سعید نے پاکستان بھارت سلامتی مشیروں کے درمیان بنکاک میں خفیہ ملاقات کو اچھی شروعات سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک نے اعتماد سازی کی خلیج کو دور کرنے کیلئے مفاہمتی راہ اختیار کی۔انہوں نے کہا کہ پی ڈی پی کا ہمیشہ سے ہی اسی طرح کا موقف رہا ہے اور بھارتی حکومت بھی اب یہی محسوس کررہی ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان بغیر کسی شور شرابے کے مفاہمتی عمل اور تعلقات آگے بڑھنے چاہئے۔

سرکاری ہسپتال گاندھی نگر جموں میں منعقدہ ایک تقریب کے حاشئے پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے وزیر اعلی مفتی محمد سعید نے کہا کہ ہند پاک سلامتی مشیروں کے درمیان بنکاک میں خفیہ ملاقات اچھی شروعات ہے۔انہوں نے کہابھارت اور پاکستان کے قومی سلامتی مشیروں کے درمیان بات چیت اچھی شروعا ت ہے۔

ان کا کہنا تھا یہ ایک خوش آئند قدم اور اچھی شروعات ہے،ہم کامیابی کی امید کرتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے قومی سلامتی مشیروں کے درمیان بنکاک میں ملاقات اور بات چیت سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ دونوں ممالک نے اعتماد سازی کی خلیج کو صرف اور صرف مفاہمتی راہ اختیار کرنے سے ہی ختم کیا جاسکتا ہے۔وزیر اعلی نے ان خیالات کا اظہار ہند پاک قومی سلامتی مشیروں کے درمیان بنکاک میں خفیہ ملاقات پر کیا۔وزیر اعلی مفتی محمد سعید کا کہنا تھا یہ وہی عمل ہے جو ہم سوچتے تھے اور حکومت ہند بھی ہماری طرح سے سوچ رہی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ بغیر کسی شور شرابے کے دونوں ممالک کے درمیان مفاہمتی عمل شروع ہونا چاہئے اور پی ڈی پی کا یہی موقف ہے۔انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان اعتماد سازی کی ایک بڑی خلیج ہے جس کو ختم کرنے کیلئے زمین کو ہموار کرنا اور اس کیلئے تیاری کرنا انتہائی ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ اس کیلئے دونوں ممالک نے ابتدائی مرحلے پر شروعات کی ہے جس کی مثال قومی سلامتی مشیروں کے درمیان ملاقات اور خارجہ سکریٹریز کے درمیان بات چیت ہے۔مفتی محمد سعید نے کہامیرے خیال سے بھارت اور پاکستان تیاری کررہے ہیں ۔ لیکن میں یہ نہیں کہہ سکتا ہوں کہ کچھ بڑا ہونے والا ہے تاہم عمل کی شروعات ہوئی ہے اور اس سے دونوں ممالک کے درمیان اعتماد سازی کی فضاقائم ہوگی اور ایک شروعات ہوچکی ہے۔مفتی محمد سعید نے کہایہ میرا موقف تھا۔۔۔یہ میرے ذہن میں تھا اور یہی سب کچھ ہو رہا ہے۔۔۔مفتی محمد سعید نے کہا کہ یہ ابھی ارتقائی عمل ہے اس میں مزید وقت لگ سکتا ہے اور سب کچھ ایک ہی ملاقات میں نہیں ہوگا۔یہ ایک پیچ و خم سے بھرپور عمل ہے تاہم اچھی شروعات ہوئی ہے اور ہمیں ان ملاقاتوں اور مذاکرات سے کامیابی کی امید ہے۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ بنکاک میں ہند پاک قومی سلامتی مشیروں کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں مسئلہ کشمیر سمیت دونوں ممالک کے باہمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔مفتی محمد سعید نے وزیر خارجہ سشما سوراج کے دورہ پاکستان کو ہندو پاک کے درمیان اعتماد سازی کے آغاز سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے تعلقات میں کافی خلیج ہے جبکہ انہوں نے واضح کیا کہ راتوں رات اگرچہ کوئی یخ پگل نہیں سکتی تاہم مذاکراتی عمل کے لئے میدان ہموار ہوسکتا ہے۔

مزید : عالمی منظر