ریاست میں انسانی حقوق کی پامالیوں اور گرفتاریوں کے خلاف سرینگر میں خواتین کا دھرنا

ریاست میں انسانی حقوق کی پامالیوں اور گرفتاریوں کے خلاف سرینگر میں خواتین ...

  

سری نگر (کے پی آئی)ریاست میں انسانی حقوق کی پامالیوں اور گرفتاریوں کے خلاف سرینگر میں مسلم خواتین مرکز کی طرف ف سے احتجاجی دھرنا دیا گیا ۔مسلم خواتین مرکز کی چیئرپرسن یاسمین راجہ کی قیادت میں خواتین نے پریس کالونی میں احتجاج کیا ۔اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینر لئے احتجاجی خواتین نے اسلام اور آزادی کے حق میں ، فورسز کے ہاتھوں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں،خواتین کے ساتھ زیادتیوں اور کشمیر کے اطراف و اکناف میں گرفتاریوں کے خلاف نعرے لگائے ۔اس موقعہ پر یاسمین راجہ نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ10دسمبر کو اقوام متحدہ اور اقوام عالم کی سیاسی و سماجی اور انسانی مسائل سے جڑے ادارے انسانی حقوق کے تحفظ کا عالمی دن دنیا بھر میں مناتے ہیں تاہم جموں کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیاں ،قتل و غارت گری اورخواتین کے ساتھ زیادتیاں اور بزرگوں،نوجوانوں اور معصوم بچوں کی گرفتاریاں جاری ہیں۔انہوں نے انسانی حقوق کے عالمی دن پر اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بانکی مون اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ جموں کشمیر میں فورسز کے ہاتھوں ظلم و جبر کو روکنے،تنازعہ کشمیر کو حل کرنے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں میں ملوث بھارتی فورسز کے اہلکاروں کو سزا دلانے کے اقدامات کریں۔ انہوں نے اقوام متحدہ سے ریاست جموں کشمیر سے تمام بھارتی فورسز اور غیر فوجی اداروں کے انخلا کا مطالبہ کیا ، حریت (گ)چیئرمین سید علی گیلانی کی مسلسل خانہ نظر بندی اورمختلف جیلوں میں قید و بند حریت پسند ؤں کی رہائی اوراقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق تنازعہ کشمیر کے پائیدار حل کے مطالبات کئے۔

مزید :

عالمی منظر -