حکومت شیل گیس کے ذخائر کی تلاش کا کام تیز کرے: لاہور چیمبر

حکومت شیل گیس کے ذخائر کی تلاش کا کام تیز کرے: لاہور چیمبر

  

لاہور (کامرس رپورٹر)لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے حکومت پر زور دیا ہے کہ شیل گیس کے ذخائر کی تلاش کا کام تیز کرے کیونکہ اس سے نہ صرف توانائی کی قلت پر قابو پانے میں مدد ملے گی بلکہ آئل امپورٹ بل بھی کم ہوگا جو تجارتی خسارے کی ایک بڑی وجہ ہے۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد، سینئر نائب صدر الماس حیدر اور نائب صدر ناصر سعید نے کہا کہ شیل گیس کے ذخائر پر تیزی سے کام کی وجہ سے امریکہ کا توانائی کی درآمد پر انحصار کم ہوا ہے لہذا ہمیں بھی ان ذخائر سے بھرپور استفادہ کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی کابینہ نے 2013ء میں شیل گیس پالیسی کی منظوری دی تھی جو صنعتی شعبے کی بحالی کی جانب ایک اہم قدم تھا اور تاجر برادری پْرامید تھی کہ حکومت اس منصوبے کی جلد تکمیل کے لیے راہ ہموار کرے گی لیکن ابھی تک اس معاملے پر کوئی واضح پیش رفت سامنے نہیں آرہی۔ لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے وفاقی حکومت پر زور دیا کہ وہ شیل گیس ذخائر کی تلاش کے سلسلے میں پنجاب کو ترجیح دے اور اس منصوبے کی جلد تکمیل کے لیے نجی شعبے کو اعتماد میں لے۔ انہوں نے کہا کہ لاہور چیمبر عرصہ دراز سے حکومت پر زور دیتا آرہا ہے کہ گیس کے غیر روایتی ذخائر کی تلاش پر توجہ دے کیونکہ روایتی ذرائع تیزی سے کم ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شیل گیس کے سلسلے میں نجی شعبے کو اعتماد میں لینا بہت ضروری ہے کیونکہ اس پر بھاری سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی کی ضرورت ہے جو نجی شعبے کی شمولیت کے بغیر ممکن نہیں۔ مزید برآں لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد نے حکومت پر زور دیا کہ وہ گیس کی قیمتوں میں بارہا اضافوں سے گریز کرے

کیونکہ گیس صنعتوں کا اہم خام مال ہے اور اس کی قیمتوں میں کمی بیش کے اثرات صنعتوں کی پیداواری لاگت پر بھی مرتب ہوتے ہیں۔ انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ گیس کی قیمتوں میں اضافے کے بجائے گیس کے نئے ذخائر کی تلاش پر کام تیز کرے۔

مزید :

کامرس -