بلدیاتی انتخابات کا تیسرا مرحلہ، ضلع راولپنڈی میں مسلم لیگ (ن) کی اکثریت !

بلدیاتی انتخابات کا تیسرا مرحلہ، ضلع راولپنڈی میں مسلم لیگ (ن) کی اکثریت !

اسلام آبادسے ملک الیاس

پنجاب اور سندھ کے دیگر اضلاع کی طرح راولپنڈی میں بھی بلدیاتی الیکشن کا تیسرا مرحلہ اختتام پذیر ہوگیا،ضلع راولپنڈی میں تیسرے مرحلے میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں پاکستان مسلم لیگ (ن) نے واضح برتری حاصل کر لی ہے ،میئر کے انتخاب کیلئے جوڑ توڑ شروع ہے،مسلم لیگ ن کی کامیابی پر کارکنوں نے ساری رات جشن منایا آتش بازی ہوتی رہی تحریک انصاف کی طرف سے راولپنڈی سے بڑی تعداد میں سیٹیں لینے کے دعوے کیے گئے تھے مگر حلقہ این اے56جہاں سے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان قومی الیکشن2013ء میں کامیاب ہوئے تھے وہاں سے مسلم لیگ ن کے امیدوار بھاری اکثریت سے کامیاب ہوئے تحریک انصاف کو اس حلقے سے بھی بری طرح شکست کاسامنا کرنا پڑا اسی طرح شیخ رشید احمد جس حلقے این اے55سے ایم این اے منتخب ہوئے ہیں وہاں سے ان کے امیدوار بھی بری طرح ہار گئے ہیں البتہ انکا بھتیجا شیخ راشد شفیق کامیاب ہوگیا ہے، پاکستان مسلم لیگ ن نے میونسپل کارپوریشن راولپنڈی میں میئر کیلئے راہ ہموار کر لی ہے ،آزاد امیدواروں کی بھی ایک بڑی تعداد کامیاب ہوئی ہے جبکہ پی ٹی آئی چیئرمین کی دوسیٹیں حاصل کرسکی،،پاکستان پیپلز پارٹی کے حمایت یافتہ انجم فاروق پراچہ ،بابر سلطان جدون،راجہ تصدق بھی کامیاب ہوگئے ۔

میونسپل کارپوریشن راولپنڈی کی یونین کونسل 1 سے چوہدری عمر مشتاق، یوسی 2سے راجہ تصدق،یوسی 3سے بابر خان جدون، یوسی4سے چوہدری عابد، یوسی 5سے ڈاکٹر شفقت، یوسی7سے ثقلین حیدر، یونین کونسل 8راجہ مقصود، یونین کونسل 9شاہد لطیف، یونین کونسل10محمد یاسین،یوسی11سے چوہدری زبیر،یوسی12سے آزاد امیدوار محمد خورشید،یوسی13سے چوہدری طارق،یوسی 14سے چوہدیر چنگیز،یوسی15سے شیخ ارسلان، یوسی17سے حامد،یوسی18سے راجہ عابد عباسی،یو سی 19سے عبدالغیور بٹ، یوسی20حاجی ارشد،یوسی 21ملک وسیم،یوسی 22سے محمد جہانگیر، یوسی 23سے خالد بٹ،یوسی25سے ساجد بھٹی، یوسی26سے ملک اسحاق، یوسی27پی ٹی آئی کے اظہر اقبال ستی،یوسی29سے جبران رفیق، یوسی 30سے ممتاز خان پی ٹی آئی، یوسی 31سے جمیل اختر،یوسی32 سے پیپلز پارٹی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار راجہ شاہد پپو،یوسی 33سے آزاد امیدوار سمیع گل، یوسی34سے عامر میر، یوسی36سے سردار نسیم ،یوسی 37محمد خورشید آزاد امیدوار، یوسی38سے ذیشان احمد،یوسی39سے انجم فاروق پراچہ،یوسی40پاکستان عوامی مسلم لیگ کے شیخ راشد شفیق، یوسی42سجاد خان، یوسی43ملک صابر،یوسی44سے حاجی الیاس،یوسی45ملک سلطان اور یوسی 46سے راجہ مشتاق کامیاب ہوئے ہیں۔

جبکہ میونسپل کمیٹی ٹیکسلا سے پاکستان مسلم لیگ(ن) 12تحریک انصاف نے 10نشستوں پر کامیابی حاصل کی، میونسپل کمیٹی گوجرخان سے پاکستان مسلم لیگ(ن)9،تحریک انصاف2،آزاد 7،پاکستان پیپلز پارٹی1،میونسپل کمیٹی کوٹلی ستیاں پاکستان مسلم لیگ(ن)9،آزاد 5، میونسپل کمیٹی کلر سیداں پاکستان مسلم لیگ(ن)17،تحریک انصاف2آزاد 4، میونسپل کمیٹی کہوٹہ پاکستان مسلم لیگ(ن) 1،تحریک انصاف 1جماعت اسلامی 1،آزاد 11،میونسپل کمیٹی مری مسلم لیگ(ن)2، پی ٹی آئی نے 1سیٹ پر کامیابی حاصل کی،ضلع کونسل راولپنڈی کی یونین کونسل 85سے سنیٹر چوہدری تنویر کے بھانجے اور ایم پی اے چوہدری سرفراز افضل کے کزن چوہدری عمران الیاس 2200کی لیڈ سے کامیاب جبکہ ضلع کونسل کی 45نشستیں مسلم لیگ(ن) ،8تحریک انصاف،42آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں۔

بلدیاتی الیکشن کے دوران راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں لڑائی جھگڑے کی شکایات سامنے آئیں،پولیس اور ینجرز کی بھاری نفری تعینات رہی، مسلم لیگ(ن) اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان بعض پولنگ سٹیشنوں میں معمولی تلخ کلامی سے ماحول کشیدہ رہاالیکشن کمیشن راولپنڈی کے پاس 100سے زائد شکایات درج کرائی گئیں، یوسی36میں پاکستان مسلم لیگ(ن) سردار نسیم اور آزاد امیدوار حاجی گلزار اعوان کے حامیوں کے درمیان جھگڑا ہوا رینجرز اور پولیس نے موقع پر پہنچ کر حالات پر قابو پالیا،حاجی گلزار کی جانب سے مسلم لیگ(ن) پر دھاندلی کا الزام لگایا گیا اسی یونین کونسل 79میں مسلم لیگ(ن) اور تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان بھی کشیدگی پائی گئی مسلم لیگ(ن) کے امیدوار دوست محمد خان کے قریبی عزیز داد خان مہمند پر تحریک انصاف کے کارکنوں نے تشددکیا ،داد خان نے موقع سے بھاگ کر جان بچائی ، ڈھوک الہی بخش ، ٹیپو روڈ،ڈھوک فرمان علی ،شمس آباد، صادق آباد،النور کالونی،موہن پورہ آریہ محلے میں پاکستان تحریک انصاف، پاکستان مسلم لیگ(ن) کے کارکنوں کے درمیان معمولی لڑائی جھگڑے ہوئے دونوں طرف سے ایک دوسرے پر دھاندلی کے الزمات لگائے جاتے رہے جس کی وجہ سے اِن علاقوں میں قائم پولنگ اسٹیشنز پر ماحول کافی کشیدہ رہاخواتین اور مرد پولنگ اسٹیشنز پر الیکشن کمیشن کی جانب سے فراہم کی جانے والی انتخابی فہرستوں میں غلطیوں کی بھر مار تھی جس سے انتخابی عملے کو بھی دشواری کا سامنا کرنا پڑا یونین کونسل 45میں پاکستان مسلم لیگ(ن) اور تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان بہبود سنٹر میں قائم خواتین کے پولنگ اسٹیشن پر ہاتھا پائی ہو گئی ایک دوسرے پر دھاندلی کے الزام لگائے گئے تاہم پولیس نے موقع پر پہنچ کر حالات پر قابو پالیا،یونین کونسل 42،44،21،27اور29نمبر میں بھی لڑائی جھگڑے کے واقعات رونما ہوئے،یونین کونسل 79ضلع کونسل میں بھی حالات پورا دن کشیدہ رہے،پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری بھی پولنگ اسٹیشنز کے باہر تعینات رہی۔

سابق صوبائی وزیر اور مسلم لیگ(ق) کے راہنما راجہ بشارت کی آبائی یونین کونسل دھمیال86میں الیکشن کے موقع پر معمولی تلخ کلامی پر فائرنگ کے نتیجے میں راجہ بشارت کا بھانجاراجہ شعیب جاں بحق جبکہ دو افراد شدید زخمی،جس پر پولنگ روک دی گئی، علاقے بھر میں پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری گشت کرتی رہی ، زخمیوں کو طبی امداد کیلئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر سول ہسپتال راولپنڈی منتقل کر دیا گیا، جاں بحق راجہ شعیب کی نعش پوسٹمارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کردی گئی جس کی اگلے روز تدفین کی گئی نمازجنازہ میں تمام سیاسی جماعتوں کے مقامی رہنماؤں نے شرکت کی، بلدیاتی الیکشن کے تیسرے مرحلے کے بعد مئیر اور ڈپٹی میئر،چیئرمین ضلع کونسل کا انتخاب ہو گا، جس کیلئے الیکشن کمیشن آئندہ چند روز میں شیڈول کا اعلان کریگا،راولپنڈی میٹروپولیٹن کارپوریشن کیلئے مسلم لیگ(ن) کے متوقع میئر کے امیدواروں میں سردار نسیم،سجاد خان،شیخ ارسلان حفیظ شامل ہیں پاکستان تحریک انصاف کے رانا سہیل احمد شکست کھاکر میئر کی دوڑ سے باہر ہوچکے ہیں پاکستان مسلم لیگ(ن) کے سردار نسیم اس وقت میئر کے سب سے مضبوط امیدوار کے طور پر سامنے آئے ہیں۔

مزید : ایڈیشن 1