ایف بی آر کے آئرس سسٹم میں خرابی سے60فیصد ٹیکس ریٹرن جمع نہیں ہوسکیں

ایف بی آر کے آئرس سسٹم میں خرابی سے60فیصد ٹیکس ریٹرن جمع نہیں ہوسکیں

لاہور (کامرس رپورٹر)ایف بی آر کے آئرس سسٹم کی خرابی کی وجہ سے 60فیصد ٹیکس ریٹرن جمع نہیں ہوسکیں۔افسروں کے تبادلوں کی بجائے سسٹم کو ٹھیک کیا جائے۔پرال کا سربراہ بیوروکریٹ کی بجائے کسی تکنیکی آدمی کولگایا جائے۔اگر یہی صورتحال برقراررہی تو خدشہ ہے کہ ایف بی آر کا ریونیوشارٹ فال کھربوں روپے تک پہنچ جائیگا۔ ایف بی آر کو ٹیکس گزاروں اور ٹیکس پریکٹیشنرز کا استحصال نہیں کرنے دینگے۔ان خیالات کا اظہار لاہورٹیکس بار کے سابق سیکرٹری جنرل اورصدارتی امیدوارایم عامر قدیرنے ’’ٹیکس ریفارمز‘‘موضوع پر منعقدہ مذاکرے خطاب کرتے ہوئے کیا۔جس میں لاہورٹیکس بار ایسوسی ایشن پیٹرن انچیف ضیاء رضوی، پاکستان ٹیکس بار ایسوسی ایشن کے سابق صدر ذوالفقارخان،اجمل خان،سابق سینئر نائب صدرمحمد سعید چودھری،لاہورٹیکس بارایسوسی ایشن کے سابق صدرقاری حبیب الرحمٗن زبیری،علی احسن راناسمیت ٹیکس ماہرین نے بری تعدادمیں شرکت کی ۔عامر قدیر نے کہاکہ ایف بی آر کے آئرس سسٹم کی خرابی کی وجہ سے 60فیصد ٹیکس ریٹرن جمع نہیں ہوسکیں۔

ٹیکس

مزید : صفحہ آخر


loading...