خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت سے ایرانی قونصلر جنرل کی ملاقات

خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت سے ایرانی قونصلر جنرل کی ملاقات

پشاور( پاکستان نیوز)خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت سردار اکرام اﷲ خان گنڈاپور سے منگل کے روز ان کے دفتر میں ایرانی قونصلر جنرل محمد بی بیجی نے ملاقات کی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس دوران دونوں اسلامی ممالک کے مابین اخوت و بھائی چارے کو فروغ دینے ،ترقی کے میدان میں ایک دوسرے کے تجربات سے استفادہ کرنے اور اقتصادی و زرعی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے سلسلے میں دونوں ملکوں کے ورکنگ گروپ تشکیل دینے سے متعلق بات چیت کی گئی۔وزیر زراعت نے کہا کہ ایران کی طرف سے خیبر پختونخوا میں زراعت ، فنی تعلیم، جانوروں کی ویکسینیشن ، مذبح خانوں اور گوشت کی بہتر پیکنگ سمیت دوسرے شعبوں کی بہتری میں تعاون کا خیر مقدم کیا جائیگا۔ وزیر خوراک نے کہا کہ ثقافتی لحاظ سے دونوں ممالک کے عوام ایک دوسرے کے قریب ہیں۔تاہم خیبر پختونخوا کی حکومت ایران کو زراعت میں سرمایہ کاری کرنے کیلئے ایسا سازگار ماحول فراہم کرے گا جس سے دونوں ممالک کو کافی فوائد حاصل ہونگے۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کی حکومت نے پہلی دفعہ صوبے میں ایک لاکھ 80ہزار ٹن گندم کا بیج، 3لاکھ 70ہزار زمینداروں میں مفت تقسیم کیا ہے جبکہ آئندہ سال تخم کے ساتھ کھاد مفت تقسیم کی جائیگی۔انہوں نے مزیدکہا کہ ڈیرہ اسماعیل خان میں 7ہزار ٹن بین الاقوامی معیار کی کجھور پیدا ہورہی ہے لیکن بدقسمتی سے مناسب پیکنگ اورپراسنگ نہ ہونے سے یہاں کے زمیندار مطلوبہ فوائد حاصل نہیں کرسکتے۔ایرانی قونصلر جنرل نے ڈیرہ اسماعیل خان کا دورہ کرنے کے علاوہ صوبہ خیبر پختونخوا میں زراعت سمیت دیگر شعبوں کی ترقی میں تعاون پر آمادگی کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملاقات کے دوران طے پانے والے فیصلوں پر عمل درآمد کے لئے مزید اقدامات جاری رکھے جائینگے۔اس موقع پر وزیر زراعت نے ایران کے قونصلر جنرل کو دو نایاب تلواروں کا تخفہ بھی پیش کیا۔

مزید : پشاورصفحہ اول