فیس نہ ملنے پر ایرانی ڈاکٹروں نے بچی کی سرجری ادھیڑ ڈالی

فیس نہ ملنے پر ایرانی ڈاکٹروں نے بچی کی سرجری ادھیڑ ڈالی
فیس نہ ملنے پر ایرانی ڈاکٹروں نے بچی کی سرجری ادھیڑ ڈالی

  


تہران (ویب ڈیسک) ایران کے ذرائع ابلاغ نے حال ہی میں ایک نہایت المناک اور افسردہ کرنے والی خبر دی ہے اور بتایا ہے کہ اصفہان کے قصاب صفت ڈاکٹروں نے ایک غریب خاتون کی بچی کے زخمی چہرے پر لگائے گئے تانکے کھینچ کر نکال دئیے۔ ڈاکٹروں کی جانب سے یہ طالمانہ عمل بچی کی والدہ کی جانب سے ڈیرھ لاکھ ایرانی تومان رقم کی ادائیگی نہ ہونے کی وجہ سے کیا گیا۔ ایرانی زرائع ابلاغ نے بھی ہسپتال انتظامیہ کے ظالمانہ طرز عمل کی شدید مذمت کرتے چار سالہ زخمی بچے کی سرجری ادھیڑنے میں ملوث ”قصابوں“ سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا مطالبہ کیا ہے۔ رپورٹ میں بتایا ہے کہ اصفہان گورنری کے ثمینی شہر کے علاقے میں واقع اشرفی نامی ہسپتال کے ڈائریکٹر نے زخمی بچی کے علاج کے لئے اس کی ماں کی جانب سے پیسے نہ دینے پر ٹانکے نکالنے کا حکم دیا جس کے بعد زخمی بچی کے ٹانکے کھینچ کر نکال دئیے گئے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...