بزنس کمیونٹی نئی آڈٹ پالیسی کو مسترد کرتی ہے: گوجروانوالہ چیمبر

بزنس کمیونٹی نئی آڈٹ پالیسی کو مسترد کرتی ہے: گوجروانوالہ چیمبر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور (کامرس رپورٹر)گوجرانوالہ چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر سعید احمد تاج نے کہا ہے کہ ایف بی آر کی طرف سے متعارف کروائی جانے والی نئی آڈٹ پالیسی 2016ء صرف اور صرف بزنس کمیونٹی کی پریشانیوں میں مزید اضافہ کا سبب بنے گی جسے تمام بزنس کمیونٹی متفقہ طور پر مسترد کرتی ہے ۔ آڈٹ پالیسی 2016ء پر ماضی کی طرح اس بار پھر ایف بی آر نے کاروباری برادری کو اعتماد میں نہیں لیا ۔

آڈٹ پالیسی 2016ء کے تحت FBRان ٹیکس دہندگان کا دوبارہ آڈٹ کر سکے گا جن کا پہلے آڈٹ کیا جا چکا ہو۔انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ آڈٹ پالیسی 2016ء کاروباری برادری کو ہراساں کرنے کا ایک نیا ذریعہ بن جائیگی جس سے کاروباری ماحول خراب ہو گا کاروباری برادری کو پہلے ہی ٹیکس عملے کی جانب سے صوابدیدی اختیارات کے غلط استعمال کا سامنا ہے جس میں یہ آڈٹ پالیسی مزید اضافہ کریگی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور چیمبر آف کامرس کے زیر اہتمام ہونے والے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا جس کی صدارت لاہور چیمبر کے صدر عبدالباسط نے کی۔اس موقع پر صوبہ بھر کے 19چیمبروں کے صدور نے شرکت کی۔یاد رہے کہ اس اجلاس میں تمام چیمبرز کے صدور نے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا کہ اگر ایف بی آر نے آڈٹ پالیسی 2016ء بزنس کمیونٹی کے مفاد میں سوچتے ہوئے واپس نہ لی تو ربیع الاول کے فوراً بعد تمام چیمبر زبلیک ڈے مناتے ہوئے چیمبرکی عمارتوں پر سیاہ پرچم لہرائیں گے۔علاوہ ازیں کوئی بھی پالیسی مرتب کرنے سے قبل بزنس کمیونٹی کو ضرور اعتماد میں لیا جائے جس سے ریونیو میں اضافہ بھی ہو گا اور ملکی معیشت بھی ترقی کی راہ پر گامزن ہو گی ۔

مزید :

کامرس -