مولانا ظفر احمد عثمانی نے تحریک پاکستان میں بھرپور حصہ لیا،پروفیسر شرافت علی

مولانا ظفر احمد عثمانی نے تحریک پاکستان میں بھرپور حصہ لیا،پروفیسر شرافت ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور (اپنے خبر نگار سے )مولانا ظفراحمد عثمانی نے تحریک پاکستان اور بعدازاں تعمیر پاکستان میں بھرپور حصہ لیا۔سلہٹ اور صوبہ سرحد میں ریفرنڈم کے موقع پر آپ نے پاکستان کے حق میں رائے عامہ ہموار کی۔ مولانا ظفر احمد عثمانی اپنی زندگی میں مذہبی و سیاسی تحریکوں میں پیش پیش رہے۔ ان خیالات کا اظہارپروفیسرشرافت علی نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان ،شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں تحریک پاکستان کے رہنمامولانا ظفر احمد عثمانی کی 42ویں برسی کے موقع پرنئی نسل کو ان کی حیات و خدمات سے آگاہ کرنے کیلئے منعقدہ خصوصی لیکچر کے دوران کیا۔ اس لیکچر کا اہتمام نظریۂ پاکستان ٹرسٹ نے تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے اشتراک سے کیا تھا۔ پروگرام کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک ،نعت رسول مقبولؐ اور قومی ترانہ سے ہوا۔پروفیسرشرافت علی نے کہا کہ ممتاز عالم دین‘ مفسر‘ عظیم سیاستدان‘ مولانا ظفر احمد عثمانی 1890ء میں دیوبند میں شیخ لطیف احمد عثمانی کے ہاں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم دیوبند میں حاصل کی۔ پھر مولانا اشرف علی تھانوی کی خدمت میں تھانہ بھو ن چلے گئے اور عربی ‘فارسی کی تعلیم حاصل کی پھراستادِ حدیث مقرر ہوئے۔ علاوہ ازیں احکام القرآن اورفتاویٰ امداد الاحکام تصنیف کیں۔ بیشتر مذہبی اورسیاسی تحریکوں میں بھرپور حصہ لیا۔ آپ اور آپ کے ساتھی علماء نے ہندو مسلم اتحاد کے دوررس نتائج کے حوالے سے مسلمانوں کو خبردار کیا کہ یہ صورت حال مسلمانوں کے لیے قطعی فائدہ مند نہیں ہے۔ مولانا ظفر احمد عثمانی نے مسلمانوں کی سیاسی سطح پر رہنمائی اور اصلاح و تبلیغ کی غرض سے مولانا اشرف علی تھانوی کی قائم کردہ مجلس میں بھی سرگرم حصہ لیا تھا۔ نومبر 1945ء میں جمعیت العلمائے اسلام کے تحت کلکتہ میں عظیم الشان کانفرنس منعقد ہوئی۔ اس کانفرنس میں مولانا شبیر احمد عثمانی‘ مولانا ظفر احمد عثمانی‘ مولانا محمد شفیع اور دیگر کئی علماء نے شرکت کی اور متفقہ طور پر مسلم لیگ کی حمایت کا اعلان کیا اور انتخابات میں مسلم ووٹروں سے مسلم لیگ کو ووٹ دینے کی اپیل کی۔ پاکستان کے قیام کے فیصلے کے بعد سلہٹ اور صوبہ سرحد میں ریفرنڈم کا موقع آیا تو انہوں نے سلہٹ کے مسلمانوں کو اسلامی جذبۂ اخوت کے تحت بیدار کیا۔