قصور کی چوکی ہلہ کے انچارج کے خلاف پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ

قصور کی چوکی ہلہ کے انچارج کے خلاف پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(وقائع نگار) ضلع قصور کی چوکی ہلہ کے انچارج سب انسپکٹر انور سیال کے ظلم وستم ، کرپشن اور اختیارا ت سے تجاوز کے خلاف گزشتہ روز درجنوں افراد نے پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرین نے چوکی انچارج کے خلاف بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے جس پر آئی جی پنجاب، آر پی او شیخوپورہ اور ڈی پی او قصور سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ چوکی انچارج کے ظلم وستم سے رہائشیوں کو بچایاجائے ، کوئی بھی شریف شہری چوکی ہلہ نہیں جاسکتا، میرٹ پر بھی رقم کا مطالبہ کیا جاتا ہے اگر کوئی شہری میرٹ کی بات کرے تو اس کو تشدد کا نشانہ بنانے کے ساتھ ساتھ ذلیل وخوار کیا جاتا ہے۔مظاہرین رانا محمد اسلم، تنویر، اکبر جٹ، شوکت علی، اختر وغیرہ کا کہنا تھا کہ وہ چوکی ہلہ گئے جہاں چوکی انچارج نے کئی روز سے ایک شخص کو غیر قانونی حراست میں بٹھا رکھا تھا، چوکی انچارج انور سیال سے بات کی تو اس کے پاس کھڑے ٹاوٹ نے رقم کا مطالبہ کیا جب انہیں کہا کہ یہ کوئی جرائم پیشہ شخص نہیں ہے کس بات کے پیسے مانگ رہے ہو تو چوکی انچارج نے انہیں ذلیل وخوار کرکے چوکی سے نکال دیا جبکہ ایک شہری شوکت کو تشدد کا نشانہ بنایا، اگر چوکی انچارج انور سیال کو تبدیل نہ کیا گیا تو وہ وزیر اعلیٰ ہاؤس کے سامنے مظاہرہ کرنے پر مجبور ہونگے ۔
پولیس افسران نے موقع پر پہنچ کر ان سے بات چیت کی اور انہیں انصاف دلوانے کا وعدہ کیا جس پر مظاہرین منتشر ہوگئے ۔

مزید :

علاقائی -