جنس تبدیلی کے بعد کلاس فیلو سے شادی‘ نوجوان کی گرفتاری کا حکم

جنس تبدیلی کے بعد کلاس فیلو سے شادی‘ نوجوان کی گرفتاری کا حکم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان(خبر نگار خصوصی)ہائیکورٹ ملتان بینچ نے جنس تبدیل ہونے کے بعد کلاس فیلوسے پسند کی شادی کرنے والے نوجوا ن کو طبی معائنہ کرانے کے لئے پیش نہ ہونے پر گرفتارکرکے 13 دسمبرکو پیش کرنے کا حکم دیاہے۔ فاضل عدالت میں تونسہ شریف کی رہائشی عائشہ سجاد نے درخواست دائر (بقیہ نمبر47صفحہ12پر )
کی تھی کہ اس کی کلاس فیلو نازیہ احمد حسن کی جنس تبدیل ہونے کے بعد نام منیل احمد رکھ لیا اوردونوں نے اپنی پسند وآزاد مرضی سے شادی کرلی تو درخواست گذارکے والدین نے غلط حقائق پر اس کے اغواء کا جھوٹا مقدمہ شوہر کے خلاف درج کرادیاہے اس لئے مذکورہ مقدمہ خارج کرنے کا حکم دیاجائے۔ درخواست کی سماعت پر درخواست گذارخاتون کی ساس عدالت پیش ہوئیں اوربیان دیاکہ جنس کی تبدیلی کابیان سراسر غلط ہے اوراس کی بیٹی ابھی نازیہ احمد حسن ہے اور اس کی جنس تبدیل نہیں ہوئی ہے۔جس پر فاضل عدالت نے ایم ایس نشتر ہسپتال کو میڈیکل بورڈ تشکیل دے کر طبی معائنہ کرانے کا حکم دیا تھا تاہم گزشتہ روز سماعت پر عدالت کو بتایاگیا کہ مذکورہ نوجوان طبی معائنہ کے لئے پیش نہیں ہواہے۔
جنس تبدیل