کسی نے ادھر کھڑے ہو کر نعرہ لگایا تھا کہ دسمبر بھی گزر جائے گا، پتہ لگایا جائے کہ ان کا منصوبہ کیا ہے: بابر اعوان

کسی نے ادھر کھڑے ہو کر نعرہ لگایا تھا کہ دسمبر بھی گزر جائے گا، پتہ لگایا جائے ...
کسی نے ادھر کھڑے ہو کر نعرہ لگایا تھا کہ دسمبر بھی گزر جائے گا، پتہ لگایا جائے کہ ان کا منصوبہ کیا ہے: بابر اعوان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر وکیل بابر اعوان نے کہا ہے کہ کسی نے ادھر کھڑے ہو کر نعرہ لگایا تھا کہ دسمبر بھی گزر جائے گا، آج بھی یہاں نعرے لگائے گئے، ان کا منصوبہ کیا ہے معلوم کیا جائے ۔ پیپلز پارٹی اور دیگر اپوزیشن میں دوریاں ختم ہونی چاہئیں، ہم اکیلے بھی رہے تو چوروں کا پیچھا ضرور کرتے رہیں گے۔

سپریم کورٹ کا پاناما لیکس کیلئے کمیشن نہ بنانے کافیصلہ ، سماعت جنوری 2017ءکے پہلے ہفتے تک ملتوی
تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بابر اعوان نے کہا کہ یہ کہتے ہیں کہ دسمبر بھی گزر جائے گا مجھے نہیں پتہ اس کا مطلب کیا ہے، مگر پتہ لگایا جائے کہ ان کا منصوبہ کیا ہے۔ کیس 2017ءمیں داخل ہوگیا مگر اس کا یہ مطلب نہیں کہ ملزموں کو قانون چھوڑے گا ۔ انہوں نے کہا کہ مجرم خاندان کے تحفظ کیلئے سرکاری وسائل استعمال ہو رہے ہیں ، چاہتے ہیں کہ اپوزیشن متحد ہو ہو جائے، اکیلے بھی رہے تو احتساب کیلئے کوشش ضرور کریں گے۔ پاکستان میں احتساب کیلئے میری دعا بھی ہے اور کوشش بھی ہے۔