دعا منگی کو سات دن تک کس حال میں رکھا گیا اور اغوا کار کون محسوس ہوتے تھے؟ بازیابی کے بعد مغویہ نے اہلخانہ کو بتا دیا

دعا منگی کو سات دن تک کس حال میں رکھا گیا اور اغوا کار کون محسوس ہوتے تھے؟ ...
دعا منگی کو سات دن تک کس حال میں رکھا گیا اور اغوا کار کون محسوس ہوتے تھے؟ بازیابی کے بعد مغویہ نے اہلخانہ کو بتا دیا

  



کراچی (ویب ڈیسک) شہر قائد کے پوش علاقے سے اغو اہونیوالی لڑکی دعا منگی ایک ہفتے بعد مبینہ طور پر تاوان کی ادائیگی کے بعد گھر پہنچ چکی ہیں تاہم پولیس کسی بھی قسم کا سراغ لگانے سے ناکام رہی ، اہلخانہ نے خود ہی معاملات کو سنبھالا۔ 

بی بی سی اردو کے مطابق  ’صبح ساڑھے دس بجے کا وقت تھا سارے گھر والے ٹیلیفون کال کے انتظار میں تھے کہ دروازے پر بیل بجی ایک فرد اٹھا اور باہر جا کر دیکھا تو دعا منگی موجود تھیں۔ کراچی کے علاقے کورنگی کراسنگ میں رہائشی ڈاکٹر نثار منگی کا خاندان تقریباً سات روز سے ذہنی اذیت کا شکار رہا تھا۔

’دعا نے اپنے خاندان کو بتایا کہ انہیں سات روز تک ہاتھ اور پیر میں زنجیر باندھ کر رکھا گیا جبکہ آنکھوں پر بھی پٹی بندھی ہوئی تھی تاہم ان پر کوئی تشدد نہیں کیا گیا، ملزمان آپس میں اردو زبان میں بات کرتے تھے اور وہ پیشہ ور مجرم لگتے تھے"۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی