شہری لاپتہ کیس،اسلام آبادہائیکورٹ نے ڈی آئی جی سیف سٹی پراجیکٹ کوآئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا

شہری لاپتہ کیس،اسلام آبادہائیکورٹ نے ڈی آئی جی سیف سٹی پراجیکٹ کوآئندہ ...
شہری لاپتہ کیس،اسلام آبادہائیکورٹ نے ڈی آئی جی سیف سٹی پراجیکٹ کوآئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے تھانہ لوہی بھیرکی حدودسے شہری سلمان فاروق کے لاپتہ ہونے کے کیس میں ڈی آئی جی سیف سٹی پراجیکٹ کوآئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا،عدالت نے حکم دیاہے کہ وزارت داخلہ کا جوائنٹ سیکرٹری سطح کا افسر آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ پیش کرے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں تھانہ لوہی بھیرکی حدودسے اسلام آباد کے شہری سلمان فاروق کے لاپتہ ہونے کے کیس کی سماعت ہوئی، عدالت نے استفسار کیا کہ سیف سٹی پراجیکٹ پر ساڑھے 7ارب روپے لاگت آئی،یہ ہمارے کس کام کا ہے؟جسٹس محسن اخترکیانی نے کہا کہ سیف سٹی پراجیکٹ میں گاڑیوں کے نمبر ہی نظر نہیں آرہے؟خاص طور پر جو گاڑیاں دوسروں کو اٹھاتی ہیں ان کے نمبر ہی کیمرے میں نہیں آتے۔

پولیس نے عدالت کے سامنے بیان دیتے ہوئے کہاکہ گاڑی کی نمبر پلیٹ نہیں تھی اس لیے نمبر نظر نہیں آیا،جسٹس محسن اخترکیانی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ تو پھر کیا کررہی ہے پولیس،یہ ناکے کس لیے ہیں؟سیف سٹی کیمروں میں گاڑیوں کے نمبر ہی نظر نہیں آرہے؟سیف سٹی کیمروں میں گاڑیوں کی نمبر پلیٹ ہی نظر نہیں آرہی، عدالت نے ڈی آئی جی سیف سٹی پراجیکٹ کوآئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا،عدالت نے حکم دیتے ہوئے کہا کہ وزارت داخلہ کا جوائنٹ سیکرٹری سطح کا افسر آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ پیش کرے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...