دوستوں کے ساتھ مل کر گرل فرینڈ کی اجتماعی زیادتی ، پھر لڑکے نے اپنی ماں کے ساتھ مل کر لڑکی کو زندہ جلادیا

دوستوں کے ساتھ مل کر گرل فرینڈ کی اجتماعی زیادتی ، پھر لڑکے نے اپنی ماں کے ...
دوستوں کے ساتھ مل کر گرل فرینڈ کی اجتماعی زیادتی ، پھر لڑکے نے اپنی ماں کے ساتھ مل کر لڑکی کو زندہ جلادیا

  



اگرتلہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست تریپورہ میں ایک 17 سالہ نوجوان لڑکی کو اس کے بوائے فرینڈ نے 2 مہینے تک اپنے دوستوں کے ساتھ اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد اپنی ماں کے ساتھ مل کر اسے پٹرول چھڑک کر آگ لگادی۔

جنوبی تریپورہ کے علاقے شانتر بازار میں ایک 17 سالہ لڑکی اور لڑکے کی سوشل میڈیا پر ملاقات ہوئی، دونوں میں پہلے دوستی ہوئی جو محبت میں بدل گئی، اسی دوران لڑکے نے لڑکی کے گھر جا کر اسے شادی کیلئے پرپوز کردیا جس کے بعد دونوں ایک ساتھ رہنے لگے۔

لڑکی نے جیسے ہی اپنے بوائے فرینڈ کے گھر رہنا شروع کیا تو انہوں نے اس سے پیسوں کا مطالبہ کرنا شروع کردیا، پیسے نہ دینے پر لڑکے نے لڑکی کو اپنی ماں کے ساتھ مل کر یرغمال بنالیا اور 2 مہینے تک اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر اس کی اجتماعی عصمت دری کرتا رہا۔

لڑکے نے لڑکی کے گھر والوں سے 50 ہزار روپے کا تاوان مانگا لیکن غربت کے باعث لڑکی کے گھر والے صرف 17 ہزار روپے ہی جمع کرپائے۔ پیسے نہ ملنے پر لڑکے نے اپنی ماں کے ساتھ مل کر نوجوان لڑکی کو پٹرول چھڑک کر آگ لگادی جس کے باعث اس کے جسم کا 90 فیصد حصہ جھلس گیا، پڑوسیوں نے لڑکی کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا جہاں وہ جان کی بازی ہار گئی۔

لڑکی نے مرنے سے پہلے اپنے والدین کو خود پر گزرنی والی ظلم و ستم کی ساری داستان سنائی اور بتایا کہ کس طرح اس کے ساتھ 2 مہینے تک اجتماعی زیادتی کی جاتی رہی ہے۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم لڑکے اور اس کی ماں کو گرفتار کرلیا ہے ۔

مزید : جرم و انصاف


loading...