کیا مسلم لیگ ن آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق حکومت کا ساتھ دے گی یا نہیں ؟اعلان ہو گیا

کیا مسلم لیگ ن آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق حکومت کا ساتھ دے گی ...
کیا مسلم لیگ ن آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق حکومت کا ساتھ دے گی یا نہیں ؟اعلان ہو گیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع اور الیکشن کمیشن کے ارکان کی تقرری سے متعلق مجوزہ ترمیم کے حوالے سے حکومت سے رابطے نہ رکھنے کا اعلان کردیا،سابق  وزیر دفاع اور پاکستان نمسلم لیگ ن کے سینئر رہنماخواجہ محمد آصف نے الیکشن کمیشن تقرریوں سمیت کسی بھی قانونی ترمیم کے لیے حکومت سے رابطہ قائم نہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ایسی صورت حال میں حکومت سے رابطے برقرار نہیں رکھے جاسکتے، جو کانٹے بکھیر رہے ہیں وہی اُن کو  چنیں۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئےخواجہ آصف کا کہنا تھا کہ لندن میں شہبازشریف کی صدارت میں مسلم لیگ ن کا اجلاس ہورہاتھا وہاں حملہ کیا گیا ، گیٹ توڑنے کی کوشش کی گئی،وہاں اوربھی گھرہیں اِس قسم کے  سیاسی تشدد سے معاملات  پوائنٹ آف نو ریٹرن پرپہنچ سکتے ہیں،سیاست میں  بہت نشیب و فراز دیکھے کبھی مخالفین کے گھروں پر حملے نہیں ہوئے تھے،یہ خوفناک روایت ہے جب یہ سلسلہ شروع ہوگیا تو بند نہیں ہوگا،حملہ آوروں کے چہروں کو نہیں بھولیں گے، ایسے رویوں کی سرپرستی نہ کریں یہ وقت گزرجائے گا، اقتدار سے  قوت بصارت اور قوت سماعت چھن جاتی ہے،موجودہ حکمران ان دونوں سے محروم ہوچکے ہیں ۔اُنہوں نے کہا  کہ لندن میں  ہمارے قائد کے گھر پر حملہ ہوسکتاہے توپاکستان میں بھی اِن کے گھر محفوظ نہیں رہیں گے،کہاں تک اِن معاملات کو لے کر جائیں گے۔اُنہوں نے کہا کہ سیشن چلانے کیلئے ہم سے رابطے کیے جاتے ہیں لیکن جو رویہ اختیار کیا جارہا ہے اُس سے پیغام دیا جارہاہے کہ اپوزیشن کے ساتھ تعاون نہیں بلکہ دشمنی  ہوگی،کیا  یہ رویے  اپوزیشن  سے تعاون کا راستہ ہے؟یہ توجنگ کا پیغام دیا جارہا ہے،اگر ایسا ہے تو ہم اس جنگ کیلئے تیار ہیں مگر اس جنگ سے سارا سسٹم لپیٹاجاسکتاہے،یہ باربار آرمی چیف کی مدت کے معاملے کو سپریم کورٹ میں پیش کرتے رہے، جس انداز میں تین دنوں میں سپریم کورٹ میں پیش ہوتے رہے 72سالہ تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی،یہ اپنوں کو وہ۔۔۔۔۔۔۔ بناسکتے ہیں عوام کو نہیں اور اپنے لوگوں کوبھی وہ۔۔۔۔۔۔بنا کر یہاں لائے ہیں۔

اُنہوں نے کہا کہ میں  ایوان کو گواہ بناکر کہہ رہاہوں کہ نوازشریف یا کسی سیاستدان کے گھر کے تقدس کو پامال  کرنے کی کوشش کی گئی تو سخت ردعمل آئے گا،آخر تک پیچھا کریں گے،نوازشریف کیلئے آخری حد تک جائیں گے، نواز شریف حکومت نہیں عدالت کی اجازت سے گئے ہیں،لندن میں حملہ آوروں اور پلان بنانے والوں کے نام سب کوبتائیںگے،جس ماحول کےبیچ بوئیں گےحکمران جماعت وہی کاٹےگی،اَب یہ جوبوئیں گےخود ہی کاٹیں ہم سے تعاون کی توقع نہ رکھیں، الیکشن  کمیشن کے معاملات ہیں، قانون سازی ہے، جو بھی معاملہ آئیگا ہم اُس کا حصہ نہیں بنیں گے۔

مزید : قومی


loading...