آرٹس کونسل الیکشن، غیر جانبدار سیٹ اپ کی نگرانی ضروری ہے، مبشر میر 

آرٹس کونسل الیکشن، غیر جانبدار سیٹ اپ کی نگرانی ضروری ہے، مبشر میر 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی (اسٹاف رپورٹر)آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے الیکشن میں دی آرٹس فورم کے امیدوار برائے سیکرٹری مبشر میر نے مطالبہ کیا ہے کہ ماضی کے ناخوشگوار واقعات کو مدنظر رکھتے ہوئے غیر جانبدارانہ سیٹ اپ کی نگرانی میں 20دسمبر کو ہونے والے الیکشن کا پرامن انعقاد یقینی بنایا جائے۔متنازعہ شخصیت اور جانبدار انتظامیہ کی وجہ سے ناخوشگوار واقعات پیش آسکتے ہیں۔چیف سیکرٹری سندھ،کمشنر کراچی،آئی جی سندھ،ڈی جی سندھ رینجرز اور چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کو ارسال کیے گئے مراسلے میں مبشر میر نے کہا کہ  23دسمبر 2018پاکستان آرٹس کونسل کی تاریخ کا تاریک ترین دن تھا جب ایک منصوبے کے  تحت انتہا پسند گروپ نے آرٹس کونسل کی ایک باعزت خاتون ممبر پر حملہ کیا۔ ان کا جرم صرف یہ تھا کہ انہوں نے آرٹس کونسل کے سالانہ جنرل باڈی اجلاس میں آرٹس کونسل میں مسلط گروپ کی کارکردگی کے حوالے سے سوال اٹھایا تھا۔میڈیا نے اس ناخوشگوار واقعہ کی مکمل کوریج کی تھی۔انہوں نے کہا کہ حیران کن بات یہ تھی کہ اس اجلاس کی انتظامیہ نے ایسا رویہ روا رکھا جس سے یہ ظاہر ہوتا تھا کہ انتظامیہ بھی اس افسوس ناک کھیل کا حصہ ہے۔بہرحال صورت حال پر وقتی طور پر قابو پالیا گیا کیونکہ انتظامیہ نے یہ وعدہ کیا تھا کہ ہم اس غنڈہ گردی کے خلاف ایکشن لیں گے تاہم تقریبا دو سال کا عرصہ گذرنے کے باوجود ان لوگوں کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی جنہوں نے اس باعزت خاتون پر حملہ کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے یہ کہنا خارج از امکان نہیں کہ اس سال بھی الیکشن کے موقع پر وہی واقعات پیش آسکتے ہیں کیونکہ اب بھی وہی متنازعہ شخصیت آرٹس کونسل کراچی کی صدر ہے جبکہ بدقسمتی سے انتظامیہ بھی وہی ہے۔مبشر میر نے مطالبہ کیا کہ آرٹس فورم گروپ کے ممبران کو سکیورٹی فراہم کی جائے اور غیر جانبدارانہ سیٹ اپ کے تحت دسمبر میں منعقد ہونے والے جنرل باڈی اجلاس اور 20دسمبر کو ہونے والے الیکشن کا پرامن انعقاد یقینی بنایا جائے۔