زکریا یونیورسٹی: بانی ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی  ایشن صوفی نیاز لودھی کا نماز جنازہ ادا وی سی‘ رجسٹرار‘ کنٹرولر امتحانات‘ اساتذہ  ملازمین کی بڑی تعداد میں شرکت‘ ڈاکٹر منصور  اکبر کنڈی کا مرحوم کی خدمات کو خراج تحسین

        زکریا یونیورسٹی: بانی ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی  ایشن صوفی نیاز لودھی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 ملتان (سپیشل رپورٹر)بہاء الدین زکریا یونیورسٹی ملتان کے پرنٹنگ پریس کے اسسٹنٹ  اور  بانی ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن / موجوودہ ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن (بقیہ نمبر22صفحہ 6پر)
کے نائب صدر صوفی محمد نیاز لودھی کی نماز جنازہ یونیورسٹی میں ادا کی گئی. نماز جنازہ علامہ فاروق خان سعیدی نے پڑھائی. نماز جنازہ میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر منصوراکبر کنڈی، رجسٹرار صہیب راشد خان، کنٹرولر امتحانات پروفیسر ڈاکٹر محمد امان اللہ، اکیڈمک سٹاف ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر عبدالستار ملک، آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر رانا جنگ شیر، ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر ملک صفدر حسین، مرحوم کے بھائی محمد ریاض لودھی ویگر رشتہ دار وں،اساتذہ کرام، ڈینز، صدور شعبہ، آفیسران، ملازمین، اراکین ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن، عمائدین شہر اور مریدین نے کثیر تعدادمیں شرکت کی.صوفی محمد نیاز لودھی کا جنازہ یونیورسٹی کی تاریخ کا سب سے بڑا جنازہ تھا. اس موقعہ پر وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر منصور اکبر کنڈی نے کہا کہ صوفی محمدنیاز لودھی مرحوم نے ملازمین کے مسائل کے بارے ملاقات کے موقعہ پر مجھے کہاکہ خدا نے آپ کو ایک بڑے منصب پر فائز کیا ہے آپ سے استدعا ہے کہ یونیورسٹی میں حق و انصاف کا بول بالا کرتے ہوئے یہاں انصاف کی روایت کو مستحکم کریں اور مجھے یقین ہے کہ آپ کے اندر یہ صلاحیت پوری طرح سے موجود ہے. صوفی محمدنیاز لودھی مرحوم نے یہ بھی  مجھے کہا تھا کہ یونیورسٹی کے ملازمین میرے بھائی اور بیٹے ہیں. وائس چانسلر نے کہا کہ میں اس یونیورسٹی کے ملازمین کی توقعات پر پورا ترنے کی کوشش کروں گا.واضح رہے کہ صوفی محمد نیاز لودھی مرحوم نے یونیورسٹی کے ملازمین کے حقوق کے لیے مسلسل جدوجہد کی اور ان کے حقوق کے لیے سینہ سپر رہے. احتجاجی سیاست میں جوش و جذبہ سے کام لیتے ہوئے حق پرستی کی روایات کو برقرار رکھتے تھے. ملازمین ان کی قیادت میں اپنے آپ کو محفوظ محفوظ سمجھتے تھے. ماضی میں کئی بار ایسوسی ایشن کے صدر و جنرل سیکرٹری منتخب ہوتے رہے. موجودہ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹرمنصور اکبر کنڈی مرحوم کی خوش اخلاقی، تہذیبی اور مدلل گفتگو کے قائل تھے۔
خراج تحسین