ورکرز کے حقوق کا تحفظ کرینگے، وزیر صنعت پنجاب 

    ورکرز کے حقوق کا تحفظ کرینگے، وزیر صنعت پنجاب 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 لاہور(سٹی رپورٹر)صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت دربار ہال سول سیکرٹریٹ میں صوبے بھر کے ایوان ہائے صنعت و تجارت کے صدور کامشاورتی اجلاس منعقد ہوا۔شرکاء اجلاس کوانسپکٹرلیس رجیم بارے اعتماد میں لیا گیا۔ایوان ہائے صنعت و تجارت کے صدور نے انسپکٹر لیس رجیم کو حکومت کا ذبردست اقدام قرار دیا۔ اجلاس میں صوبائی وزیرمحنت انصر مجید خان،سیکرٹری لیبر سیکرٹری صنعت و تجارت،سیکرٹری ہاؤسنگ اور محکمہ صنعت و تجارت کے افسران کی اجلاس میں شرکت کی جبکہ صدر ایوان صنعت و تجارت لاہور میاں طارق مصباح سمیت پنجاب بھر کے ایوان ہائے صنعت و تجارت کے صدور و عہدیداران نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔سیکرٹری لیبر احمد جاوید قاضی نے انسپکٹر لیس رجیم کے خدوخال بارے بریفنگ دی۔  صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت سٹیک ہولڈرزسے مشاورت کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انسپکٹر لیس رجیم سے پنجاب کا صنعتی کلچر بدلے گا۔حکومت کے صنعتوں کے لئے توانائی سپورٹ پیکج سے انڈسٹری کو فائدہ ہوگا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ورکرز کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا، کسی کو استحصال نہیں کرنے دیں گے، انہوں نے کہا کہ کاروباری تنظیموں اور ورکرز کی رجسٹریشن کے لئے پورٹل کے ذریعے آن لائن سہولت دی گئی ہے جبکہ سیلف ایسیسمنٹ سکیم کے تحت بھی ورکرز کی رجسٹریشن کرائی جا سکتی ہے۔میاں اسلم اقبال نے کہا کہ انسپکٹر لیس رجیم کے حوالے سے صنعت کاروں کی تجاویز کا جائزہ لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کوویڈ19 سے متاثرہ کاروبار کی بحالی اور نئے کاروبار شروع کرنے کے لئے پنجاب روزگار سکیم کے تحت قرضوں کی فراہمی جلد شروع ہوگی۔ صوبائی وزیر محنت انصر مجید خان نے کہا کہ ہماری حکومت نے گزشتہ دو سال کے دوران ایک لاکھ 21ہزار ورکزز کی رجسٹریشن کی، جبکہ گزشتہ 8سال کے دوران 95ہزارورکرزرجسٹرڈ ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ محنت وانسانی وسائل میں جدید اصلاحات کی گئی ہیں۔

مزید :

کامرس -