سندھ ہائیکورٹ، مصطفی کمال کو نااہل قرار دینے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ 

سندھ ہائیکورٹ، مصطفی کمال کو نااہل قرار دینے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ 
سندھ ہائیکورٹ، مصطفی کمال کو نااہل قرار دینے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ ہائیکورٹ نے پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال کو نااہل قرار دینے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا جو آج ہی سنایا جائے گا۔
نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال کو نااہل قرار دینے کی درخواست کی سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی،عدالت نے کہاکہ مصطفی کمال کے پاس کوئی عہدہ نہیں تو کیسے نااہل قرا ردیں؟،عدالت نے سلمان مجاہد سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آئین کاآرٹیکل 199 پڑھیں بتائیں یہ درخواست کیسے سنیں؟۔
سلمان مجاہد نے کہاکہ مصطفی کمال کو2002 میں ملازمت سے برطرف کیاگیاتھا،عدالت نے کہاکہ مصطفی کمال کے پاس کوئی عوامی عہدہ نہیں ، تو درخواست کیسے قابل سماعت ہے؟،جب کاغذات نامزدگی جمع ہوئے اس وقت اعتراض ہو سکتا تھا،کامیابی کے بعد بھی ٹریبونل میں اپیل ہوسکتی تھی مگر اب وقت نہیں ، ایڈووکیٹ سلمان مجاہد نے کہاکہ پاناما کیس میں مثال موجود ہے،عدالت نے کہاکہ پاناما کیس میں منتخب وزیراعظم اور رکن اسمبلی کیخلاف معاملہ تھا۔
سلمان مجاہد نے کہاکہ مصطفی کمال نے جھوٹا حلف نامہ جمع کرایا،عدالت قراردے کہ مصطفی کمال صادق وامین نہیں رہے،عدالت نے کہاکہ جب حلف نامہ جمع کرایاگیااس وقت چیلنج کرنا چاہئے تھا،وکیل نے کہاکہ مصطفی کمال مختلف عہدوں پررہے مگر درخواست گزار نے کبھی اعتراض نہیں کیا،ایڈووکیٹ حسان صابر نے کہاکہ کبھی ریٹرننگ افسریاٹریبونل میں کوئی درخواست نہیں دی، درخواست قابل سماعت نہیں مسترد کی جائے،عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا،عدالت نے کہاکہ کیس کافیصلہ آج ہی سنایا جائے گا۔