مظفر گڑھ مراکز صحت ملازمین کی چھ ماہ سے تنخواہیں بند، مظاہرے

مظفر گڑھ مراکز صحت ملازمین کی چھ ماہ سے تنخواہیں بند، مظاہرے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


مظفرگڑھ(بیورو رپورٹ تحصیل رپورٹر)محکمہ ہیلتھ کی جانب سے  بنائے  24/7 IRMNCH پروگرام کے تحت بنائے  گئے سنٹر جس میں آر ایچ سی، بی ایچ یو پر تعینات(بقیہ نمبر23صفحہ6پر)
 ایل ایچ وی،آیا سکورٹی گارڈ،ڈرائیور، و ددیگر ملازمین کو 6ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے،ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے دفتر کے سامنے نے مرد و خواتین ملازمین نے اپنا احتجاجی کیمپ لگایا، اور احتجاجی مظاہرہ کرتے رہے،جس میں،نجمہ، زہرا،نورین،نوشین اختر،رضیہ تبسم  کاکہنا تھا کہ میں سات ماہ گزرجانے کے بعد ابھی تک تنخواہ بھی نہیں ملی ہے،اور حکومت کی جانب سے ہمیں نوکری سے فارغ کرنے کا پیغام بھی مل گیا ہے،31 دسمبر کو تمام ملازمین کی نوکریاں ختم ہو جائیں گے،احتجاج کرنے والوں نے کہاہے کہ چھ ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر ہمارے گھر میں فاقوں کا صورت حال ہے،اس مہنگائی کے دور میں کھانا پینا مشکل ہو گیا ہے اوپر سے تنخواہ بند کر دی ہے،ہماری وزیر اعلی پنجاب  سیکرٹری ہیلتھ سے اپیل ہے کہ ہماری تنخواہوں کی ادائیگی کی جائے،اور ہمیں نوکری سے فارغ کرنے والا نوٹس کو فوری ختم کردیا جائے،تمام ملازمین کو 10 سال سے زیادہ عرصہ ہوگیا ہے جو کنٹریکٹ پر کام کر رہے ہیں، اگر ہمارے مطالبات جن میں  BHUاور RHC سٹاف کی SNE اور ریگو لرائزیشن بغیر کسی nts ٹیسٹ  کے. اور تنخواہ کا اجرا نہ ہوا تو ہم وزیراعلی ہاس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کریں گے،
مظاہرے