شفاف انتخابات، سرکاری مشینری کا استعمال روکنا ہوگا: زاہد خان 

شفاف انتخابات، سرکاری مشینری کا استعمال روکنا ہوگا: زاہد خان 

  

       پشاور(سٹی رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان زاہد خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کا دورہ پشاور الیکشن ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے لیکن آج بھی عوام سے جھوٹ بولا گیا۔فلاحی ریاست بنانے کے دعویداروں نے صرف تین سال میں ملکی معیشت کا کباڑہ کردیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے خطاب پر ردعمل دیتے ہوئے اے این پی کے مرکزی ترجمان زاہد خان کا کہنا تھا کہ پختونخوا میں غربت کی کمی کے دعوے کرنے والے دوسری دنیا میں رہتے ہیں، ایک وزیر اس سے پہلے بھی یہ جھوٹ بول چکے ہیں۔پختونخوا سمیت پورے ملک میں ان تین سالوں میں عوام کو جس طرح ذلیل کیا گیا، آج عوام بول پڑے ہیں۔ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی حالیہ سروے میں عوام نے بھی بتادیا کہ ہوشربا مہنگائی کی وجہ حکومتی نااہلی ہے۔آج ڈالر پاکستان کی تاریخ کے بلند ترین سطح 177 سے تجاوز کرچکا ہے۔زاہد خان نے مزید کہا کہ ہیلتھ انشورنس کے نام پر عوامی پیسوں پر ڈاکہ ڈالا گیا اور دوستوں کی کمپنیوں و ہسپتالوں کو فائدہ پہنچایا گیا۔2018ء میں خیبرپختونخوا کے عوام کا مینڈیٹ چوری کیا گیا اور نااہل حکمرانوں کو عوام پر مسلط کیا گیا۔جب بڑے بڑے دعوے کئے جارہے تھے تو اسٹیٹ بینک نے خوشخبری سنائی کہ پاکستان کا مجموعی قرضہ 40ہزار 249ارب ہوگیا ہے۔دی اکانومنسٹ کے سروے کے مطابق پاکستان دنیا کا تیسرا مہنگا ترین ملک بن چکا ہے لیکن حکمرانوں کو شاید خبر ہی نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ باہر ممالک کے قصیدے پڑھنے والے اور مثالیں دینے والے یاد رکھیں، عوام کی قوت خرید بہت پہلے جواب دے چکی ہے۔بلدیاتی انتخابات میں اپنی ہار دیکھ کر الیکشن کمیشن کے منع کرنے کے باوجود وزیراعظم کو پشاور کا دورہ کرنا پڑا۔شفاف انتخابات کیلئے سرکاری مشینری کا استعمال اور وزیراعظم سمیت وزراء کی مداخلت کو روکنا ہوگا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -