ادھار گاڑی لیکر واپس نہ کرنے والے ملزم کی ضمانت منظور، ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او کو 50 ہزار کا جرمانہ ملزم کو ادا کرنے کی ہدایت

ادھار گاڑی لیکر واپس نہ کرنے والے ملزم کی ضمانت منظور، ایس ڈی پی او اور ایس ...
ادھار گاڑی لیکر واپس نہ کرنے والے ملزم کی ضمانت منظور، ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او کو 50 ہزار کا جرمانہ ملزم کو ادا کرنے کی ہدایت

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) اسلام آباد ہائیکورٹ میں گاڑی ادھار لے کر واپس نہ کرنے کے الزام میں گرفتار ملزم کی ضمانت منظور کر لی گئی  جبکہ عدالت نے ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او کو 50 ہزار روپے زرتلافی ملزم کو ادا کرنے کا حکم بھی دیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں گاڑی ادھار مانگ کر واپس نہ کرنے کے الزام میں گرفتار ملزم کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی ، عدالت نے 14 صفحات کا تحریری فیصلہ جاری کیا جس میں ملزم کی ضمانت منظور کر لی گئی اور ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او پولیس اسٹیشن رمنا کو 50 ہزار روپے زر ازالہ پٹشنر کو ادا کرنے کا حکم بھی دیا۔

عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ ملزم کو غیر معینہ مدت کے لیے جیل میں رکھنے کی کوئی قانونی اور اخلاقی مجبوری نہیں ، ضمانت کی گنجائش ہو تو ٹرائل کے نام پر ملزم کو جیل میں رکھنے کی بجائے رہائی کو ترجیح دینی چاہیے۔استغاثہ کے مطابق شکایت کنندہ نے ملزم کو کار حوالے کی لیکن اس متعلق کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا۔

تحریری فیصلے میں واضح کہا گیا کہ پولیس کے سامنے اعتراف جرم کی قانون شہادت میں کوئی اہمیت نہیں۔

دوسری جانب لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد وحید نے ریونیو بورڈ کے خلاف درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج دیتے ہوئے  درخواست گزرا کو 50 ہزار روپے کا جرمانہ کردیا۔

مزید :

قومی -