سعودی عرب اور چین کا سربراہی اجلاس، بڑا اعلان کردیا

سعودی عرب اور چین کا سربراہی اجلاس، بڑا اعلان کردیا
سعودی عرب اور چین کا سربراہی اجلاس، بڑا اعلان کردیا

  

ریاض (ڈیلی پاکستان آن لائن)  سعودی عرب اور چین نے باہمی تعلقات کو خارجہ پالیسی میں ترجیح دینے کے   عزم کا اظہار کیا ہے۔ دونوں ملکوں نے ترقی پذیر ممالک کے لیے تعاون اور یکجہتی کا نمونہ قائم کرنے کا عزم  بھی کیا ہے۔   سعودی چینی سربراہی اجلاس کے بعد دونوں فریقوں کی طرف سے جاری کردہ مشترکہ اعلامیے  کے مطابق دونوں فریقوں نے اس بات کا اعادہ کیا ہے  کہ وہ ایک دوسرے کے بنیادی مفادات کی مضبوطی سے حمایت جاری رکھیں گے، اپنی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کو برقرار رکھنے میں ایک دوسرے کی حمایت کریں گے، اور ریاستوں کے اندرونی معاملات میں عدم مداخلت کے اصول، بین الاقوامی قوانین   کے دفاع کے لیے مشترکہ کوششیں کریں گے۔ سعودی عرب کی  سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے رپورٹ کیا کہ سعودی فریق نے ون چائنا پالیسی پر اپنی پابندی کا اعادہ کیا۔

مزید برآں چینی فریق نے اپنی سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھنے کے لیے مملکت کی حمایت کا اظہار کیا اور سعودی عرب کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے والے کسی بھی اقدام کی مخالفت  اور شہریوں، شہری تنصیبات، علاقوں اور سعودی عرب کو نشانہ بنانے والے کسی بھی حملے کو مسترد کیا۔ فریقین نے گزشتہ تین دہائیوں کے دوران دوطرفہ تعلقات کے ترقی پذیر مراحل پر اطمینان کا اظہار کیا۔

مزید :

بین الاقوامی -عرب دنیا -