کالعدم ٹی ٹی پی نے مذاکرات کے وقفے میں خود کو مضبوط کیا ، نیکٹا  

کالعدم ٹی ٹی پی نے مذاکرات کے وقفے میں خود کو مضبوط کیا ، نیکٹا  
کالعدم ٹی ٹی پی نے مذاکرات کے وقفے میں خود کو مضبوط کیا ، نیکٹا  

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )نیشنل کاؤنٹر ٹیرر ازم اتھارٹی (نیکٹا) نے سینیٹ  کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کو بتایا کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان ( ٹی ٹی پی ) نے امن مذاکرات کے وقفے میں خود کو مضبوط کیا ہے ۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق  نیکٹا کی جانب سے ڈی آئی جی مالا کنڈ نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کو بریفنگ دی کہ   امریکی انخلاء اور امن مذاکرات کے باعث طالبان دوبارہ سوات میں متحرک ہو گئے ،  متعلقہ علاقوں میں  200 سینیائزیشن سرچ آپریشن کئے گئے جبکہ انٹیلی جنس بیسز پر 77 آپریشنز میں متعدد افراد کو گرفتار کیا گیا۔  

  رپورٹ کے مطابق امن مذاکرات کے وقفے میں  کالعدم ٹی ٹی پی نے خود کو مستحکم کیا اور سوات میں ڈیرے ڈالے جس کے نتیجے میں آگے جا کر دہشتگردی بڑھ گئی ۔ بریفنگ کے بعد سینیٹ کمیٹی برائے داخلہ نے کالعدم ٹی ٹی پی سے متعلق ان کیمرہ اجلاس طلب کرتے ہوئے کہا کہ صورتحال انتہائی حساس ہے ، نیکٹا آئندہ اجلاس میں ان کیمرہ بریفنگ دے ۔

مزید :

قومی -