نوجوان لڑکی کی جہیز کی بھاری ڈیمانڈ پر خودکشی کےبعد ڈاکٹر رویس کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا 

نوجوان لڑکی کی جہیز کی بھاری ڈیمانڈ پر خودکشی کےبعد ڈاکٹر رویس کو زندگی کا سب ...
نوجوان لڑکی کی جہیز کی بھاری ڈیمانڈ پر خودکشی کےبعد ڈاکٹر رویس کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت میں نوجوان لڑکی نے منگیتر کی جانب سے شادی کیلئے جہیز کا مطالبہ پورا نہ کر پانے کے باعث خودکشی کر لی تھی جس پر انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن نے اس نوجوان کا ڈاکٹری کا لائسنس معطل کر دیا ہے جبکہ پولیس نے بھی کارروائی کا آغاز کر دیاہے ۔
تفصیلات کےمطابق انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن نے بیان جاری کرتے ہوئے ڈاکٹر رویس کو معطل کرنے کی تصدیق کی ، ڈاکٹر رویس نے اپنی 26 سالہ گرل فرینڈ ڈاکٹر شاہانہ سے شادی پر جہیز کا بھاری مطالبہ کیا جس پر نوجوان لڑکی نے محبت کے دعوے کرنے والے کی جانب سے ساتھ نہ دینے کے غم میں خود کشی کر لی اور اپنے آخری خط میں اپنی موت کا ذمہ دار بھی اسے ٹھہرایا ۔
انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری کر دہ بیان میں کہا گیاہے کہ ڈاکٹر ای اے رویس، انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے ایک رکن، جس پر ایک خاتون ڈاکٹر کو خودکشی کے لیے اُکسانے میں ملوث ہونے کا الزام ہے، جو سرجری میں 2 سال کی پوسٹ گریجویٹ تربیت حاصل کر رہی تھی، کو پولیس نے جہیز ممانعت ایکٹ کے تحت گرفتار کیا ہے اور ریمانڈ پر بھیج دیا ہے۔
بیان میں کہا گیا ہے، "الزامات اور گرفتاری کی انتہائی سنگین نوعیت کو دیکھتے ہوئے، ڈاکٹر جوزف بیناوین، صدر، انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کیرالہ سٹیٹ برانچ نے ڈاکٹر ای اے رویس کو حتمی فیصلے تک آئی ایم اے کی رکنیت سے معطل کر دیا ہے۔"
پولیس نے شاہانہ کی لاش کے قریب سے ایک سوسائیڈ نوٹ بھی برآمد کیا ہے جس کی بنیاد پر رویس کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جارہی ہے ۔شاہانہ کی فیملی کا کہناہے کہ ملزم کے اہل خانہ کی جانب سے ڈیڑھ کلو سونا، 15 ایکڑ زمین اور ایک بی ایم ڈبلیو گاڑی جہیز میں مانگی گئی تھی ،جب ہم نے انہیں بتایا کہ ہم یہ سب نہیں دے سکتے تو شاہانہ کے بوائے فرینڈ نے شادی منسوخ کر دی ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -