وہ حیرت انگیز بلی جس نے 25 افراد کی موت کی درست پیشن گوئی کر دی

وہ حیرت انگیز بلی جس نے 25 افراد کی موت کی درست پیشن گوئی کر دی
وہ حیرت انگیز بلی جس نے 25 افراد کی موت کی درست پیشن گوئی کر دی

  

نیویارک(نیوزڈیسک)اگر بلی روئے تو اکثر کہا جاتا ہے کہ یہ نحوست ہے اور یہ سمجھا جاتا ہے کہ کوئی بری چیز ہوگی لیکن آج ہم آپ کو ایک ایسی امریکی بلی کے بارے میں بتاتے ہیں جس نے 25افراد کی موت کی پیش گوئی کرکے دنیا کو حیرت میں مبتلا کردیا۔ یہ بلی امریکہ کے رہوڈز آئی لینڈ کے نرسنگ ہوم میں رہتی تھی اور جب بھی یہ ’آسکت‘ نامی بلی اپنے آپ کو سمیٹ کر بیٹھتی ہے تو یہ اس بات کا اعلان ہوتا کہ مریض کی عمر زیادہ نہیں بچی ہے۔ اس کی اس بات پر مریض کے رشتے دار اور ڈاکٹر یہ اندازہ لگا لیتے کہ جس مریض کے پاس یہ بلی اس طرح حرکت کررہی ہے اب اس کا آخری وقت آن پہنچا ہے۔

مزید پڑھیں:گاؤں والے مسلسل سونے کی پر اسرار بیماری میں مبتلاء معمہ حل ہو گیا،اصل وجہ سامنے آگئی

امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ممکن ہے کہ بلی مرنے والے افراد کے جسم سے نکلنے والی خوشبو کو پہچان کر ایسا کر سکتی ہے کہ وہ ان کی موت کے بارے میں بتا رہی ہے۔جانوروں کے رویے کی برطانوی ماہر جیکولین پریٹچارڈ کا کہنا ہے کہ یہ کوئی مافوق الفطرت بلی نہیں بلکہ ایسا بائیو کیمیکل طریقے سے ممکن ہے۔اس کا کہنا ہے کہ جب انسان مرنے والا ہوتا ہے تو اس کے جسم کے مختلف اعضاءسے ایسا کیمیکل نکلنے لگتا ہے کہ اس کی موت واقع ہو رہی ہوتی ہے جو یہ بلی سونگھ کر پہچان لیتی ہے۔اس کا کہنا ہے کہ جانوروں میں یہ خاصیت ہوتی ہے کہ وہ یہ سونگھ کر جان لیتے ہیں اور ایسا ہی کچھ یہ بلی بھی کرتی ہے۔

یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ کتوں میں یہ خاصیت موجود ہوتی ہے کہ وہ سونگھ کر کینسر اور مرگی جیسے امراض کی پہچان کر لیتے ہیں۔2004ءمیں ڈاکٹر جان چرچ کی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ کتوں نے سونگھ کر مثانے کے کینسر کی تشخیص کی۔ایک اور برطانوی خاتون کا کہنا ہے کہ اس کے کتے نے اس کے چھاتی کے سرطان کا پتہ لگا لیا تھا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -