سورج مکھی کی بروقت کاشت سے آمدن میں اضافہ کیا جا سکتاہے ،بابر لطیف

سورج مکھی کی بروقت کاشت سے آمدن میں اضافہ کیا جا سکتاہے ،بابر لطیف

  

راولپنڈی(اے پی پی)محکمہ زراعت پنجاب راولپنڈی کے ترجمان بابر لطیف بلوچ نے کہاہے کہ اٹک، راولپنڈی، گجرات اور چکوال میں سورج مکھی کی کاشت کا بہترین وقت یکم فروری تا آخر فروری ہے جبکہ کاشتکار سورج مکھی کی بروقت کاشت سے آمدن میں خاطر خواہ اضافہ حاصل کرسکتے ہیں۔ترجمان نے اتوار کو ایک بیان میں بتایا ہے کہ کاشتکاروں کو چاہیے کہ سورج مکھی کی ہائبرڈ اقسام کی کاشت کیلئے شرح بیج 2 تا اڑھائی کلو گرام فی ایکڑ رکھیں۔  سورج مکھی کی فی ایکڑ زیادہ پیداوار کیلئے زمین کی زرخیزی کے حساب سے کھادوں کا متناسب استعمال کریں۔ کاشتکار اوسط زرخیز زمین میں بوائی کے وقت پونے دو بوری ڈی اے پی، ایک بوری پوٹاشیم سلفیٹ جبکہ پہلے اور دوسرے پانی کے ساتھ آدھی بوری یوریا اور پھولوں کی ڈوڈیاں بنتے وقت ایک بوری یوریا فی ایکڑ استعمال کریں۔ سورج مکھی کے کاشتکار اچھی پیداواری صلاحیت کی حامل ہائبرڈ اقسام کی کاشت، مناسب شرح بیج اور کھادوں کی متناسب مقدار میں استعمال کرنے سے 30 من فی ایکڑ سے زیادہ پیداوار حاصل کرسکتے ہیں۔ پیداوار میں کمی بیشی موسمی حالات، زمین کی زرخیزی، مناسب وقت پر آبپاشی اور کھادوں کی فراہمی اور دیگر کاشتی امور پر منحصر ہے اس لئے کاشتکار سورج مکھی کی فی ایکڑ زیادہ پیداوار کیلئے محکمہ زراعت کے مقامی زرعی ماہرین سے مشورہ کریں اور بروقت کاشت کے لئے اقدامات کریں۔

مزید :

کامرس -