قابض انتظامیہ نے یاسین ملک، شبیر شاہ، اشرف صحرائی اور دیگر رہنما ؤں کو نظر بندکر دیا

قابض انتظامیہ نے یاسین ملک، شبیر شاہ، اشرف صحرائی اور دیگر رہنما ؤں کو نظر ...

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں قابض انتظامیہ نے محمد یاسین ملک، شوکت احمدبخشی، محمد یوسف نقاش اور دیگر آزادی پسند رہنماؤں کو گرفتار کر لیا ہے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کو سرینگر کے علاقے مائسمہ میں انکے گھر سے گرفتار کرکے کوٹھی باغ تھانے میں نظر بندکردیا گیا۔ قابض انتظامیہ نے شبیر احمد شاہ، محمد اشرف صحرائی، نعیم احمد خان، ایاز اکبر اوردیگر حریت رہنماؤں کو گھروں میں نظر بند کر دیاہے۔ حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاری کا مقصد انہیں 9اور 11فروری کو محمد افضل گورو اور محمد مقبول بٹ کی شہادت کی برسیوں پر بھارت مخالف احتجاجی مظاہروں کی قیادت سے روکنا ہے۔

بزرگ حریت رہنماسید علی گیلانی، کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق اور حریت رہنماؤں محمد یاسین ملک اور شبیر احمد شاہ نے آزادی پسند رہنماؤں محمد افضل گورو اور محمد مقبول بٹ کی شہادت کی برسیوں پر سومواراوربدھ کو مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔ دریں اثناء سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں حریت رہنماؤں کی تھانوں اور گھروں میں نظر بندی کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے قابض انتظامیہ کی بوکھلاہٹ قرار دیا ہے۔ یاد رہے کہ بھارت نے محمد مقبول بٹ کو 11فروی1984کوجبکہ محمد افضل گورو کو 9فروری 2013کو نئی دلی کی تہاڑ جیل میں تختہ دار پر لٹکایا تھا ۔ دونوں شہداء کی میتیں جیل کے احاطے میں ہی دفن کی گئی تھیں۔

مزید :

عالمی منظر -