محکمہِ تعلیم کے اشتراک سے سکول سیفٹی مہم کا آ غازکیا جائے

محکمہِ تعلیم کے اشتراک سے سکول سیفٹی مہم کا آ غازکیا جائے

  

 لاہور(کر ائم سیل) ڈا ئریکٹر جنرل پنجاب ایمرجنسی سروس پنجاب ڈاکٹر رضوان نصیر نے ریسکیو 1122 کے تمام ضلعی افسران کو ہدایات دی ہیں کہ وہ ہنگامی بنیادوں پرمحکمہِ تعلیم پنجاب کے باہمی اشتراک سے جنگی بنیادوں پرسکول سیفٹی مہم کا آ غاز کریں ۔ یہ ہدایات ریسکیو1122 کے ضلعی افسران کو وزیر اعلی پنجاب کی ہنگامی سیکیورٹی اجلاس کے بعد دی گئیں۔ وزیر اعلی پنجاب نے ریسکیو 1122 کی سکول سیفٹی مہم اور سکول سیفٹی کے حوالے سے تیار کیے جانے والے مواد کو سراہا جو ریسکیو1122 کے تمام ضلعی افسران کی مشاورت اور تجاویز سے تیار کیا گیا ہے تاکہ پنجاب کے تمام سکولوں میں سیفٹی وارڈن کی تربیت ایک معیاری طریقہ کار پر کی جا سکے۔ اس حوالے سے سیکرٹری سکول ایجوکیشن جبار شاھین نے محکمہ تعلیم کے ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ افسران کو ہدایت دیں کہ وہ سکولوں سے اساتذہ کوسیفٹی وارڈن کے لیے منتخب کریں اور ان کی فہرستیں ریسکیو1122 کے ضلعی افسران تک پہنچائیں۔ تا کہ ریسکیو 1122 سکولوں سے منتخب سیفٹی وارڈن کی تربیت ان کے متعلقہ ضلعوں میں کروا سکیں۔سکولوں کے سیفٹی وارڈن کی تربیت ریسکیو1122 کے تیار کیے گئے تربیتی مواد پر کی جائے گی اور تحریری اور عملی جانچ پڑتال کے بعد ماسٹر ٹرینر بنایا جائے گا۔مزید برآں سیفٹی وارڈن کو ہنگامی انخلاء کی مشقوں کی تربیت بھی دی جائے گی۔ڈی جی ریسکیو 1122 نے ضلعی افسران کو سکول سیفٹی مہم کے لیے ہر سکول میں سے دو اساتذہ کو تربیت دینے پر زور دیا۔تا کہ ایک سیفٹی وارڈن کی غیر موجودگی میں سکول کا دوسرا سیفٹی وارڈن موجود ہو۔ہر سکول میں تربیت یافتہ سیفٹی وارڈن اپنے سکول کو باقی اساتذہ کی تربیت کر سکیں۔اس کے علاوہ سیفٹی وارڈن ہنگامی حالت میں ایمرجنسی رسپانس اور ایمرجنسی مینجمنٹ میں اپنا کردار پیشہ وارانہ طریقے سے ادا کر سکیں۔ڈاکٹر رضوان نصیر نے ضلعی افسران کو سکولوں میں سیفٹی کلچر کو فروغ دینے کے لیے سکول سیفٹی پروگرام کو ہنگامی بنیادوں پرنافذ العمل لانے کی ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ سکول سیفٹی مہم کے ذریعے سکولوں میں سیفٹی کلچر کو فروغ ملے گااوراس طرح سے ارضِ وطن کے مستقبل (بچوں) کوبہتر طریقے سے ریسکیو کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا تمام ضلعی افسران اس حوالے سے کی جانے والی تربیت کی رپورٹ Provincial Monitoring Cell (PMC)کو روزانہ کی بنیاد پر جمع کروائیں گے۔اس طرح ہم ایک مؤثر ایمرجنسی رسپانس کی تیاری اور بچاؤ کی حکمت عملی تیار کر سکتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -