پٹرول کے نرخوں میں کمی کے باوجود عوام ریلیف سے محروم ہیں، میاں مقصود

پٹرول کے نرخوں میں کمی کے باوجود عوام ریلیف سے محروم ہیں، میاں مقصود

  

 لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی لاہورمیاں مقصود احمد نے کہا ہے کی پٹرول کی قیمتیں کم ہونے کے باوجود دیگر اشیاء صرف کی قیمتوں میں کمی نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے۔ان خیالات کا ا ظہار گذشتہ روز اپنے بیا ن میں کیا ۔ انھوں نے کہا حکومتی اداروں میں قوت نافذہ کی انتہائی کمی ہے کسی چیز کا سرا بھی ان کے ہاتھ میں نہیں ہے۔ عوام پریشان ہے کہ پیٹرول کی قیمتوں میں کمی کے باوجود اس کے اثرات عوام تک کیوں نہیں پہنچ پارہے۔انھوں نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے یہاں سبزیاں بڑے پیمانے پر پیدا ہوتی ہیں اور عوام 100روپے کلو سبزیاں خریدنے پر مجبور ہیں،ستم ظریفی یہ ہے کہ ہم سبزیاں برآمد کرتے ہیں اور آلو کی بہترین پیداوار کے باوجود ہم آلو چین ،ہندوستان اوربنگلہ دیش سے خرید رہے ہیں۔ گائے اور بکرے کا گوشت چار سو سے سات سو روپے کلو میں فروخت ہو رہا ہے اور ہم گوشت روس کو برآمد کرنے کا معاہدہ کررہے ہیں۔ چینی تیس روپے کلو فروخت ہوسکتی ہے مگر چینی کی ملوں کے مالکان ان سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھتے ہیں جو باری باری اقتدار میں آتے رہتے ہیں ۔  کیونکر چینی سستی کریں گے۔گویا کہ ہم بہت سی اشیاء جن میں کینو ،آم او ر دودھ جیسی بہتر اور سستی اپنے ملک میں پیدا کرسکتے ہیں لیکن ان مصنوعات کو ہم ہالینڈ ،نیوزی لینڈ،انگلینڈ ،آسٹریلیا اوردیگر ممالک سے منگوارہے ہیں۔ اور بہت سی مصنوعات مکھن اور ملک پاؤڈر وغیرہ پاکستان میں بہتر اور سستے داموں مل سکتے ہیں اس کے لیے ضروری ہے کہ حکومت ڈیری فارمز کی نگرانی اور سرپرستی کرے اور انھیں سہولتیں مہیا کریں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -