مرد سے پہلی ملاقات،خواتین صرف تین منٹ میں پسندیا ناپسندکا فیصلہ کرلیتی ہیں

مرد سے پہلی ملاقات،خواتین صرف تین منٹ میں پسندیا ناپسندکا فیصلہ کرلیتی ہیں
مرد سے پہلی ملاقات،خواتین صرف تین منٹ میں پسندیا ناپسندکا فیصلہ کرلیتی ہیں

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) امریکی سائنسدانوں نے ایک حالیہ تحقیق کے نتیجہ میں مردوں کو خبردار کیا ہے کہ اگر وہ سمجھتے ہیں کہ کسی خوبرو خاتون سے ملاقات کے بعد وہ رفتہ رفتہ اس کے دل جیتنے میں کام ہوجائیں گے تو یہ غلط فہمی ہے کیونکہ خواتین پہلی ملاقات میں محض تین منٹوں میں ہی کسی مرد کے لئے پسندیدگی یا ناپسندیدگی کا فیصلہ کرلیتی ہیں۔

مزید پڑھیں:سائنس نے بھی نوجوان لڑکیوں کو مشورہ دے دیا،مرَدوں کوانتہائی خوش کر دیا

تقریباً 3 ہزار خواتین پر اس تحقیق میں معلوم ہوا کہ خواتین میں سے تقریباً 85 فیصد محض تین منٹ میں مرد کے بارے میں فیصلہ کرتی ہیں اور اس کے لئے وہ پہلی نظر میں ہی یہ دیکھتی ہیں کہ مرد دیکھنے میں کیسا لگتا ہے، اس کے لباس کا چناﺅ کیسا ہے، اس کا بولنے کا انداز کیسا ہے اور حتیٰ کہ اس کے جسم کی خوشبو کا بھی اندازہ کرلیتی ہیں۔ خواتین محض تین منٹوں میں یہ فیصلہ بھی کر لیتی ہیں کہ مرد اپنی زندگی میں کس حد تک کامیاب یا ناکام ہو گا۔

 مصنف بین کے کی نئی کتاب "Instinct" کے لئے کی گئی تحقیق میں یہ بھی معلوم ہوا کہ اگرچہ خواتین اپنی پسند یا ناپسند کا اظہار کرنے میں کچھ دن، کچھ ماہ یا کچھ سال بھی لگا سکتی ہیں مگر وہ یہ فیصلہ پہلی ملاقات کے پہلے چند منٹوں میں ہی کر چکی ہوتی ہیں اور بعد ازاں یہی فیصلہ ان کی سوچ پر غالب رہتا ہے اور ایسا کم ہی ہوتا ہے کہ وہ بعد میں کسی کرشمے کے رونما ہونے پر اپنی سوچ تبدیل کرلیں۔

 مصنف بین کے کہتے ہیں کہ اگرچہ مرد بھی فیصلہ سازی میں جبلت پر انحصار کرتے ہیں مگر خواتین کی بہت بڑی تعداد فیصلہ سازی اور خصوصاً جنس مخالف سے متعلق فیصلہ سازی میں جبلت پر انحصار کرتی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -