کے پی فوڈ اتھارٹی، آٹا ڈیلرزاور پاکستان فلور ملزکے مابین فورٹیفکیشن بارے اجلاس

کے پی فوڈ اتھارٹی، آٹا ڈیلرزاور پاکستان فلور ملزکے مابین فورٹیفکیشن بارے ...

پشاور (سٹاف رپورٹر) رواں ماہ فوڈ فورٹیفیکیشن پروگرام کا آغاز ہوجائے گا، ڈی ایف آئی ڈی ملوں کو مائیکرو فیڈرز فراہم کرے گا، پروگرام کے اطلاق کے بعد نان فورٹیفائیڈ آٹے کی خریدوفروخت پر پابندی عائد ہوگی۔خیبر پختونخواہ فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی،آٹا ڈیلرز، اور پاکستان فلور ملزایسوسی ایشن کے چیرمین نعیم بٹ کے مابین فوڈ فورٹیفیکیشن کے حوالے سے ایک اجلاس منعقد ہواجس میں کے پی فوڈ اتھارٹی کے فوڈ سٹینڈرڈز کے مطابق فورٹیفائیڈ آٹے کی فراہمی اور فروخت کو یقینی بنانے کے لئے آٹا ڈیلرز اور چیرمین سے بات چیت ہوئی. ڈائریکٹرجنرل کے پی فوڈ اتھارٹی نے پاکستان فلور ملزایسوسی ایشن کے چیرمین نعیم بٹ کو آٹے کی فورٹیفیکیشن کے عمل کو تیز کرنے کیلئے ہدایات جاری کیں۔ فلور ملز ایسو سی ایشن کا کہنا تھا کہ اگر فلورملزکو وافر مقدار میں مائکروں فیڈرزبروقت فراہم کئے جائیں تو فورٹفیکشن کے عمل کو تیزکیا جا سکتا ہے۔ ایسوسی ایشن نے درحواست کی کہ خیبر پختونحوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی پنجاب سے نان فورٹیفائدآٹے کی ترسیل کو بند کرنے کے لئے ضروری اقدامات کرے تاکہ صوبے میں غزائیت سے بھر پور آٹے کی دستیابی یقینی ہو سکے۔ اجلاس میں فوڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر ٹیکنیکل ڈاکٹر عبدالستار شاہ نے آٹا ڈیلرز کو آئرن, زنک,فولک ایسڈ اور وٹامن ۔بی 12 کی افادیت کے بارے میں آگاہی دی. ڈائریکٹر ٹیکنیکل نے بتایا کہ یہ ہماری آنے والی نسلوں کی صحت کا سب سے اہم معاملہ ہے جس کیلئے ہم سب کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا. اجلاس کے آخر میں آٹا ڈیلرز نے ہر قسم تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ وہ سب مل مالکان سے صرف اور صرف فورٹیفائیڈ آٹا ہی خرید ینگے. اجلاس کے آخر میں فوڈ اتھارٹی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ کے پی فوڈ اتھارٹی سب سے پہلے پشاور اور پھر صوبہ بھر میں ان ملوں کے خلاف قانونی کارروائی کرے گی جو فورٹیفیکیشن نہیں کررہے اور خیبر پختونخواہ فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی پنجاب سے بغیر فورٹیفائیڈ آٹے کی ترسیل کو روکنے کے لئے ضروری اقدامات بھی اٹھائے گی

مزید : پشاورصفحہ آخر