سلیکٹڈ وزیراعظم کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، حکومتی روئیے کیخلاف حکمت عملی کیلئے سربراہی اجلاس بلانے کا فیصلہ کر لیا: مریم اورنگزیب

سلیکٹڈ وزیراعظم کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، حکومتی روئیے کیخلاف حکمت عملی ...
سلیکٹڈ وزیراعظم کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، حکومتی روئیے کیخلاف حکمت عملی کیلئے سربراہی اجلاس بلانے کا فیصلہ کر لیا: مریم اورنگزیب

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ اپوزیشن سلیکٹڈ وزیراعظم کی دھمکیوں سے ڈرنے والی نہیں، حکومتی روئیے کے خلاف حکمت عملی طے کرنے کیلئے سربراہی اجلاس بلانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ سب کو معلوم ہے عمران خان سلیکٹڈ وزیراعظم ہیں اور اس وقت ایک ڈکٹیٹر طرز کی حکومت مسلط ہے لیکن اپوزیشن کسی قسم کی ڈکٹیشن نہیں لے گی اور نہ ہی آپ کی دھمکیوں سے ڈرے گی۔

انہوں نے کہا کہ آج سلیکٹڈ وزیراعظم کی تقریر ڈی چوک تقریر سے مختلف نہیں تھی، آج عمران خان کی فاشسٹ اورآمرانہ سوچ سامنے آ گئی جو سمجھتے ہیں کہ پارلیمینٹ ان کو جواب دہ ہے ، عمران خان کو چاہئے کہ وہ پاکستان کا آئین پڑھیں ۔ عمران خان نے پارلیمان میں ہر ہفتے جواب دینے کا اعلان کیا تھا لیکن شہباز شریف کا ایک سوال ہی آپ کو گراں گزر گیا۔

ترجمان (ن) لیگ نے کہا کہ آپ نے اپنا بنی گالہ کا گھر ریگولرائز کرایا اور لوگوں کی چھت چھین رہے ہیں جبکہ مدر آف این آر او علیمہ باجی کیساتھ کر لیا ، جہانگیر ترین کو کیوں گرفتار نہیں کیا جاتا؟ عمران خان! جب آپ کنٹیٹر پر تھے تو ہم نے آپ کو ڈھیل دی تھی مگر ڈیل اور ڈھیل سلیکٹڈ وزیراعظم کے ہاتھ میں نہیں ہوتی۔

مزید : اہم خبریں /قومی