سندھ حکومت عزیر بلوچ، سانحہ بلدیہ کی رپورٹس نہ دی توتوہین عدالت ہوگی،علی زیدی

سندھ حکومت عزیر بلوچ، سانحہ بلدیہ کی رپورٹس نہ دی توتوہین عدالت ہوگی،علی ...

  



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر علی حیدر زیدی کا کہنا ہے کہ عدالت نے عزیر بلوچ، نثار مورائی، سانحہ بلدیہ رپورٹس جاری کرنے کا حکم دیاتھا۔ چیف سیکرٹری سندھ سے سندھ ہائیکورٹ کے حکم کے مطابق جے آئی ٹی کی کاپیاں فراہم کرنے کی درخواست کی۔ سندھ حکومت عمل نہیں کرتی تو توہین عدالت کے سوا کوئی آپشن نہیں۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا اپنے وکیل بیرسٹرعمر سومرو اور ان کی ٹیم کو سراہتا ہوں، وکیل نے ایک سماعت بھی مس نہیں کی اور کیسز میں دباؤ کا سامنا کیا۔ انصاف فراہمی کا براہ راست تعلق امن سے ہے، انصاف نہیں تو امن نہیں، مجھے اپنے لیڈر وزیراعظم عمران خان سے حوصلہ اور طاقت ملتی ہے۔ عمران خان نے بغیر خوف، لالچ کے انصاف کیلئے کوشش، جنگ کی، ہم نے دھمکیوں کا سامنا کیا، ہمیں خبردار کیا گیا۔وفاقی وزیر کا ٹویٹر میں مزیدکہنا تھا میرے دوست نے اسے خود کش اقدام قرار دیا، کچھ نے سیاسی اسٹنٹ کہا، اکتوبر2017ء میں سندھ ہائیکورٹ میں بطورِ شہری درخواست دائر کی۔ عام آدمی کو جاننے کی ضرورت تھی مجرموں کی پشت پناہی کون کر رہا تھا، ایسے واقعات کو ایکسپوز کرنا تھا، اسوقت کی سیاسی قیادت نے سیاسی فوائد کیلئے رپورٹس جاری نہیں کیں۔

علی زیدی

مزید : صفحہ اول