ٹرمپ نے اپنے خلاف گواہی دینے والے دو عہدیداروں کو فارغ کر دیا

      ٹرمپ نے اپنے خلاف گواہی دینے والے دو عہدیداروں کو فارغ کر دیا

  



واشنگٹن(اظہر زمان، بیورو چیف) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا سینیٹ میں مواخذے سے بری ہونے کے بعد اتنا حوصلہ بڑھ گیا ہے کہ انہوں نے کانگریس کمیٹیوں میں اپنے خلاف کھل کر سچ بولنے والے دو اہم گواہوں کو ان کے عہدے سے فوری طور پر برطرف کر دیا ہے۔ سینیٹ کا فیصلہ آنے کے صرف دو دن بعد انہوں نے یورپین یونین میں امریکہ کے سفیر گارڈن سونڈ لینڈ اور وائٹ ہاؤس میں نیشنل سکیورٹی کے اعلیٰ سٹاف ممبر لیفٹیننٹ کرنل الیگزینڈر ونڈ مین سے انتقام لیتے ہوئے سبکدوش کر دیا ہے۔ کرنل ونڈمین کے سوتیلے بھائی کرنل یووگنی ونڈ مین بھی ان کے ساتھ ہی فارغ ہو گئے ہیں۔ مبصرین کا کہنا تھا کہ ان دو اہم اہل کاروں کی شہادت اتنی موثر تھی کہ اگر مقدمے میں میرٹ کا خیال رکھا جاتا تو صدر ٹرمپ کا بچنا محال تھا لیکن سینیٹ میں ری پبلکن ارکان نے ایک کے سوا پارٹی لائن کے مطابق ووٹ کر مواخذے کی تحریک کو مسترد کروا دیا، معلوم ہوا ہے قومی سلامتی کے دو نو ں فوجی افسروں کو برطرف کرنے کے اعلان سے قبل ہی انہیں انتہائی دلت کیساتھ محافظوں کی مدد سے زبردستی وائٹ ہاؤس کمپلیکس سے نکال دیا گیا تھا۔

ٹرمپ

مزید : صفحہ اول