پشاور کی تاریخی تفریح گاہ جناح پارک کھنڈرات میں تبدیل ہوگیا

پشاور کی تاریخی تفریح گاہ جناح پارک کھنڈرات میں تبدیل ہوگیا

  



پشاور(سٹی رپورٹر)صوبائی اور ضلعی حکومتوں کی غفلت اور لاپرواہی کی وجہ سے صوبائی دارالحکومت پشاورکا تاریخی اور شہریوں کی تفریح کیلئے بنایاہواگزشتہ کئی سالوں سے جناح پارک کھنڈرات میں بدل گیاہے اور اب نوبت یہاں تک آگئی کہ پشاور کے دل میں موجود جناح باغ کوکارپاکنگ بنادیاگیاہے۔جبکہ اب بھی پارک میں جانے والوں سے ٹکٹ لیاجاتاہے،جس پر تبدیلی والی سرکار نے خاموشی اختیار کررکھی ہے۔تفصیلات کے مطابق پشاور شہر کے وسط میں واقع جناح پارک باغ جوایک تاریخی حیثیت رکھتاہے ایک دور تھاکہ صاف ستھرے جناح پارک میں رنگ برنگے پھول تھے،شہری جوق درجوق اس سرسبز باغ میں آتے تھے اور جگہ جگہ پر بچوں،خواتین اور مختلف عمر کے آفراد کا ہجوم نظر آرہاتھا،کیونکہ وہ ایک پرامن سکون کا دور تھااور حکومتیں بھی شہریوں کوشہریوں کودیگر شعبو ں کیساتھ ساتھ انکی تفریح پر بھی خاص توجہ دیاکرتی تھی،یہی وجہ تھی کہ سابق ادوار میں جناح پارک بلکہ شاہی باغ،وازیر باغ،کمپنی باغ سمیت حیات آباد میں باغ ناران اورتاتارپارک کے علاوہ مختلف مقامات پر واقع پارک اور باغات کی دیکھ بھال پر خصوصی توجہ دیاجاتاتھا۔لیکن گزشتہ کئی سالوں سے حکومتوں نے شاہی باغ اور وزیر باغ کیساتھ ساتھ تاریخی اہمیت کے حامل جناح پارک کوبھی یکسر نظر اندازکردیاگیاہے،جسکے باعث یہ تفریحی مقامات کھنڈرات میں تبدیل ہوگئے،حالانکہ ان پارکوں کی دیکھ بھال کیلئے ملازمین کی فوج ظفر موج موجود ہے،غور طلب مسلہ یہ ہے کہ جناح پارک کو پارپارکنگ میں بدل گیاہے اور کھنڈر نماجناح پارک میں صبح سے شام تک ہر طرف کھڑی ہوئی گاڑیاں ہی گاڑیاں نظر آرہی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر