میپکوکی کھلی کچہریاں ڈرامہ، شہریوں کیلئے ریلیف صرف خواب

  میپکوکی کھلی کچہریاں ڈرامہ، شہریوں کیلئے ریلیف صرف خواب

  



ملتان (نیوز رپورٹر) ملتان الیکٹرک پاورکمپنی (میپکو) ریجن بھر کے صارفین کی شکایات کے ازالے کے لئے منعقد کی جانیوالی کھلی کچہریاں عملی طور پر شہریوں اور بالخصوص ارباب اختیار کو ماسوائے ماموں بنانے کے کچھ نہیں ہیں میپکو ذرائع سے ایک دن قبل اعلان کیا جاتا ہے کہ میپکو حکام دس بجے صبح سے بارہ بجے دن تک نہ صرف شکایات سنیں گے بلکہ ان شکایات کا ازالہ بھی(بقیہ نمبر16صفحہ12پر)

یقینی بنائیں گے لیکن یہ 2 گھنٹے کا مقررہ وقت بھی نصف گھنٹہ میں تمام ہوجاتا ہے علاوہ ازیں جو صارفین کی تعداد بتائی جاتی ہے اس صارفین کے مجمع میں 80 فیصد میپکو اہلکاروں پر مبنی ہوتی ہے گذشتہ روز میپکو حکام کی جانب سے صارفین کی شکایات کے ازالہ کے لیئے ممتازآباد جامع مسجد قاری حنیف والی میں کھلی کچہری کے انعقاد کے اعلان کے باوجود عین مقررہ وقت پر جگہ تبدیل کردی گئی جس کے باعث صارفین کی اکثریت اپنی شکایات سے میپکو حکام کو آگاہ کرنے اور ان کے حل سے محروم رہے صارفین کے مطابق میپکو حکام شکایات کے لیئے اعلان شدہ مقررہ وقت تک کھلی کچہریوں میں اپنی موجودگی کو یقینی بنائیں تاکہ صارفین مقررہ وقت میں اپنی شکایات ان تک پہنچا پائیں میپکو حکام کی جانب سے کھلی کچہریوں بارے صارفین میں یہ تاثر تقویت پارہا ہے کہ ان کھلی کچہریوں میں میپکو اہکاروں کی بڑی تعداد صارفین کی میپکو حکام تک رسائی نہیں ہونے دیتے یہ بھی اطلاعات ہیں کہ صارفین کی آڑ میں پیش کی جانیوالی بیشتر درخواستیں اہلکاروں کی جانب سے لکھ کر محکمانہ خانہ پری کی جاتی ہے تاکہ ریکارڈ درست رہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر