گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں کورونا وائرس کا کوئی مشتبہ کیس رپورٹ نہیں ہوا

    گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں کورونا وائرس کا کوئی مشتبہ کیس رپورٹ نہیں ہوا

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے متاثرہ کوئی بھی مشتبہ کیس رپورٹ نہیں ہوا ہے جبکہ صوبائی محکمہ صحت نے کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لیے بھرپور اقدامات اٹھا لیے ہیں۔ ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز خیبرپختونخوا ڈاکٹر طاہر ندیم نے ا اپنے ایک پیغام میں کہا ہے کہ صوبائی سیکرٹری صحت محمد یحیٰ اخونزادہ کی ہدایات پر ائیرپورٹ پر بیرون ملک سے آنے والے ہر مسافر کی اسکریننگ کی جارہی ہے۔ اس مقصد کے لیے ہوائی اڈے پر پہلے سے زیادہ صحت عملہ تعینات کر دیا ہے۔ باچا خان انٹرنیشنل ائیرپورٹ پشاور پر تعینات صوبائی محکمہ صحت کے 31 اہلکاروں میں ڈاکٹرز، لیڈی ڈاکٹرز، نرسز، پیرا میڈیکس، ڈیٹا انٹری اہلکار اور دیگر معاون عملہ شامل ہے۔ یہ صحت عملہ ہوائی اڈے پر وفاقی صحت عملے کے ساتھ مل کر اپنے فرائض انجام دے رہا ہے۔ ڈاکٹر طاہر ندیم نے مزید کہا کہ پاک فوج کی خصوصی دلچسپی اور انتہائی تعاون سے صوبے کی سرحدوں پر بھی کورونا وائرس کے لئے خصوصی نگرانی کی جارہی ہے اور ہر مسافر کی اسکریننگ یقینی بنائی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت کے افسران و ملازمین تندہی سے فرائض انجام دے رہے ہیں تاکہ شہریوں کو کسی بھی ناگہانی صورتحال سے بچایا جا سکے۔ اسی طرح ائیرپورٹ پر ایک کل وقتی ایمبولینس کے علاوہ ریسکیو 1122 کو بھی الرٹ کر دیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ نے ایئرپورٹ کے اعلیٰ حکام، سول ایوی ایشن اور ائیرپورٹ سیکورٹی فورس کے تعاون اور ذمہ دارانہ رویے کو سراہا۔ ڈاکٹر طاہر ندیم کا کہنا تھا کہ عالمی و ملکی سطح پر اور عوام الناس میں ہائی صحت الرٹ کی وجہ سے ایسے کیسز پر بھی بھرپور توجہ دی جا رہی جو کہ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی کورونا وائرس سے متعلق جاری ایڈوائزری پر پورا نہیں اترتے۔ ایسے کئی مریضوں کی باقاعدہ کونسلنگ اور تحقیق و تشخیص کے بعد انہیں متعلقہ صحت مرکز یا گھر بھیجا گیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -