سوات میں احساس پروگرام کے تحے 107مستحقین میں چیک تقسیم

سوات میں احساس پروگرام کے تحے 107مستحقین میں چیک تقسیم

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وفاقی پارلیمانی سیکرٹری وایم این اے سلیم الرحمن اور پاکستان تحریک انصاف ملاکنڈ ڈویژن کے صدر وچیئر مین ڈیڈیک سوات فضل حکیم خان یوسفزئی نے سوات میں احساس پروگرام کا افتتاح کرتے ہوئے پہلے مرحلے میں 107مستحق افراد میں مجموعی طور پر 31لاکھ 31ہزار روپے کے فی کس 25ہزار روپے کے بلا سود قرضوں کے چیک تقسیم کیے اس موقع پر اے ڈی سی سوات زمین خان،ای پی ایس کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اکبر زیب،پی پی اے ایف پاکستان کے جی ایم فرید اللہ،حاجی فضل مولا کے علاوہ معززین علاقہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ بلا سود قرضہ سے ہزاروں لوگوں کی زندگیوں میں انقلاب آئیگامالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے ہزاروں خاندان اپنا کاروبار نہیں کر سکتے تھے تاہم احساس پروگرام کے آنے سے امید ہے کہ معاشرے کا یہ طبقہ نئے پاکستان کی بنیاد بنے گا انہوں نے کہاکہ احساس پروگرام کے تحت لاکھوں افراد کو غربت سے نکالیں گے پروگرام کے تحت محروم طبقے کو وسائل اور تربیت فراہم کی جائے گی دوسرے مرحلے میں کئی مزید اقدامات کئے جائیں گے موجودہ حکومت کی ہرپالیسی میں غربت کے خاتمے کا وژن ہے احساس پروگرام انسانیت کے راستے پر چلنے کی کوشش ہے مذکورہ پروگرام جس احساس اور جذبے کے ساتھ شروع کیا گیا ہے وہ نیک نیتی پر مبنی ہے کیونکہ اس میں صرف اور صرف پسماندہ ترین طبقے کو اہمیت دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کمزور طبقے کی مدد کیلئے ہر قسم کے عملی اقدامات کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام حکومت کااہم منصوبہ ہے پروگرام کا مقصد غربت میں کمی کیلئے جامع منصوبہ بندی ہے پروگرام کا فوکس وہ غریب طبقہ ہے جسے ہر حکومت میں نظر انداز کر دیا جاتا ہے خاص طور پر وہ طبقہ جسے دو وقت کی روٹی کمانے کے لئے جان کے لالے پڑے رہتے ہیں چھوٹے قرضوں سے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ افراد کو اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے میں مدد ملے گی انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام سمیت حکومت کی ہر مہم اور اقدام کو کامیاب کرانا ہم سب کے مشترکہ ذمہ داری ہے۔

مزید : صفحہ اول