فلپائن کے ساحل سمندر پر سرعام نوجوان جوڑے نے جنسی عمل شروع کر دیا ، پولیس پہنچی اور انہیں روکا گیا تو جوڑے نے کیا کیا ؟ حیران کن خبر آ گئی

فلپائن کے ساحل سمندر پر سرعام نوجوان جوڑے نے جنسی عمل شروع کر دیا ، پولیس ...
فلپائن کے ساحل سمندر پر سرعام نوجوان جوڑے نے جنسی عمل شروع کر دیا ، پولیس پہنچی اور انہیں روکا گیا تو جوڑے نے کیا کیا ؟ حیران کن خبر آ گئی

  



منیلا (ڈیلی پاکستان آن لائن )فلپائن کے معرو ف اور مصروف ترین فیملی ساحل سمندر پر نوجوان جوڑے کو دن دیہاڑے سرعام جنسی عمل کرنے پر گرفتار کر لیا گیا تاہم بعد ازاں انہیں ضمانت پر رہا کر دیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق فلپائن کے صوبے ” اکلان “ کے معروف ساحل سمندر ” بورا کے “ پر برطانوی لڑکی اور آسٹریلیا کے باشندے نے دن دیہاڑے لوگوں کے سامنے ہی جنسی عمل شروع کر دیا ۔ جیسمین نیلی اور اینتھونی ایک دوسرے میں اتنے زیادہ مشغول تھے کہ انہیں خبر ہی نہ ہوئی اور پولیس ان کے سر پر آن کھڑی ہوئی ، اہلکاروں نے انہیں فوری طور پر جنسی عمل روکنے کیلئے کہا لیکن جوڑے نے ان کی بات نہ سنی اور وہ اسی طرح مصروف عمل رہے ۔

پولیس نے بتایا کہ26 سالہ جوڑا شراب کے نشے میں دھت تھا ، انہیں گرفتار کر لیا گیا اور ہاتھوں میں ہتھکڑی لگا کر گاڑی میں بٹھادیا گیا لیکن انہوں نے پھر بھی بس نہیں کی اور وہ گاڑی میں بھی ایک دوسرے کے ساتھ جنسی عمل میں دوبارہ مشغول ہو گئے ۔

ڈیلی میل نے پولیس کارپورل کے حوالے سے بتایا کہ پولیس اہلکار جب بیچ پر ان کے پاس جا کھڑے ہوئے تو انہوں نے زراتوجہ نہیں دی اور اپنے عمل میں مصروف رہے ، انہیں بالکل بھی شرم نہیں آ رہی تھی کہ لوگ انہیں دیکھ رہے ہیں جبکہ خاتون اور مرد دونوں کی ہی شرم گاہیں لوگوں کو صاف نظر آ رہی تھیں ۔

انہوں نے بتایاکہ وہ دونوں ایک دوسرے میں اتنا زیادہ ڈوبے ہوئے تھے کہ انہیں اردگر د کی خبر ہی نہ تھی تاہم انہیں گرفتار کیا گیا اور مقدمہ دائر کیا گیا لیکن بعدازاں ضمانت پر رہا کر دیا گیا ۔ پولیس کا کہناہے کہ انہیں فروری میں عدالت کے سامنے پیش ہونا ہو گا اور وہ اگرایسانہیں کرتے تو انہیں فلپائن میں سفری پابندیوں کو سامنا کرناپڑسکتا ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس